پنجاب میں بند کامیاب ، سڑک اور ریل سرویس متاثر
جالندھر : تین زرعی قوانین کے خلاف کسانوں کی تنظیموں کی اپیل پر جمعہ کے روز بھارت بند کا پنجاب میں بڑے پیمانے پر اثر دیکھنے کو ملا ۔ صبح 6 بجے سے جاری بند کے دوران ریاست میں سڑک اور ریل ٹریفک متاثر ہونے کی وجہ سے لاکھوں افراد کو مشکلات کا سامنا کرنا پڑ رہا ہے ۔متحدہ کسان مورچہ (ایس کے ایم) کے بینر تلے کسان یونینوں نے احتجاج کرتے ہوئے جمعہ کو بھارت بند کی کال دی تھی ۔ پنجاب میں کسانوں کے گروپوں نے قومی اور ریاستی شاہراہوں کے ساتھ ساتھ کچھ مقامی مقامات پر ریلوے پٹریوں کے علاوہ بڑی سڑکوں پر مظاہرے اور دھرنا شروع کردیے ۔بھارت بند صبح 6 بجے سے شام 6 بجے تک رہے گا ۔ کسان سڑکوں کے ساتھ ساتھ ریلوے ٹریک پر بیٹھے ہیں۔ امرتسر میں کسانوں نے نیم برہنہ ہو کر ریلوے ٹریک پر دھرنا دیا ۔ بھارت بند کو مختلف تنظیموں اور ٹریڈ یونینوں کی بھی حمایت حاصل ہے ۔پنجاب میں ہزاروں کسانوں ، مزدوروں ، خواتین اور نوجوانوں نے ڈیڑھ سو سے زیادہ مقامات پر ٹرینوں اور سڑکوں کو بند کیا ۔ ان میں امرتسر ضلع میں جی ٹی روڈ گولڈن گیٹ ، ولا سبزی منڈی ریل گیٹ سمیت 87 مقامات پر ، 32 مقامات پر ترن تارن میں ریل اور سڑکوں پر ، 18 مقامات پر گورداس پور ،15 مقامات پر فیروز پور ، دو مقامات پر ہوشیار پور ، پانچ مقامات پر کپور تھلہ ، پانچ مقامات پر جالندھر ، دو مقامات پر موگا ، ایک جگہ پر فاضل کا ، ایک جگہ پر مکتسر اور ایک جگہ پر فریدکوٹ شامل ہے ۔

بہارمیں کسانوں۔آر جے ڈی کا ’بھارت بند‘

پٹنہ : راشٹریہ جنتا دل (آر جے ڈی) سمیت دیگر اپوزیشن پارٹیوں کی حمایت یافتہ کسانوں کے بھارت بند کا آغاز آج بہار میں پرامن انداز میں شروع ہوا۔دارالحکومت پٹنہ میں بند کے پیش نظر تمام بڑے چوک چوراہوں پرمجسٹریٹ کی سربراہی میں اضافی پولیس فورس کو تعینات کیا گیا ہے ۔ متعلقہ تھانہ علاقے کے پولیس اہلکار مسلسل گشت کررہے ہیں۔ جہاں ریلوے پولیس کے اہلکار پٹنہ جنکشن پراسٹیشن کے کیمپس میں مستعد نظرآ رہے ہیں وہیں انتظامیہ کے افسران کی موجودگی میں پولیس کی ایک بڑی تعداد اسٹیشن کے باہر تعینات کی گئی ہے ۔دارالحکومت پٹنہ میں دوسرے دنوں کی طرح صبح سے ٹریفک کے رواں دواں رہنے کی اطلاعات ہیں ۔ سڑک کے کنارے ہر دن کی طرح دکانیں کھلی ہوئی بتائی جارہی ہیں ۔ سٹی بس سروس بھی عام دنوں کی طرح چل رہی ہے ۔ اب تک کہیں سے کوئی ناخوشگوار واقعہ رپورٹ نہیں ملی ہے ۔ادھر ، حاجی پور سے موصولہ اطلاع کے مطابق بندھ کے حامیوں نے مہاتما گاندھی سیتو کے قریب چوک کو بلاک کردیا ہے ۔ اس کی وجہ سے حاجی پور ، مظفر پور اور چھپرا جانے والی سڑک پر بہت زبردست جام لگ گیا ہے ۔ جام کی وجہ سے ان راستوں پر گاڑیوں کی لمبی لمبی قطار لگ گئی ہیں ۔ آر جے ڈی کے حامی سڑک روک کر حکومت کے خلاف زبردست نعرے بازی کررہے ہیں۔مہوا کے آر جے ڈی ایم ایل اے مکیش روشن نے کہا کہ ریاستی حکومت کے کہنے پر تین دن قبل اسمبلی میں اپوزیشن ایم ایل اے پر حملہ اور بد سلوکی کی گئی ، اس کے لئے نتیش سرکار مکمل طور پر ذمہ دار ہے ۔ صرف گڈ گورننس کا ڈھول پیٹا جارہا ہے ۔قابل ذکر ہے کہ آر جے ڈی نے بے روزگاری کے معاملے پر کسانوں کے آج کے بھارت بند کی حمایت کی ہے ۔

کسانوں کا بھارت بند ، جھارکھنڈ میں ٹریفک متاثر
رانچی : مرکزی حکومت کے تین نئے زرعی قوانین کے خلاف کسانوں کے آج بھارت بند کے پیش نظر جھار کھنڈ میں جہاں سکیورٹی کے سخت انتظامات کئے گئے ہیں ، وہیں گاڑیوں کی نقل وحمل متاثر ہوئی ہے ۔ بھارت بند کی کال کے سبب ریاست بھر میں سڑکوں پر گاڑیوں کی نقل و حرکت متاثر ہوئی ہے ، لیکن دارالحکومت رانچی میں بند کا کوئی خاص اثر نہیں دیکھا جا رہا ہے ۔ وہیں ماؤنوازوں کی طرف سے بھارت بند کی حمایت کرنے کی وجہ سے نکسل متاثرہ دیہی علاقوں میں اس کا ملا جلا اثر دیکھا جارہا ہے ۔ ماؤنوازوں کے بند میں شامل ہونے سے جھار کھنڈ پولیس متحرک ہو گئی ہے ۔ بھارت بند کال کی وجہ سے بہار جانے والی طویل مسافت کی گاڑیاں کو بند کر دیا ہے ۔ تاہم قومی شاہراہوں اور دیگر بڑی سڑکوں پر مال گاڑیوں اور نجی گاڑیوں کا آپریشن معمول کے مطابق جاری ہے ۔


اپنی رائے یہاں لکھیں