کرناٹک کے اسکول میں اذاں پر تنازعہ

204

منگلورو: کرناٹک کے ایک عیسائی اسکول نے کلچرل ایونٹ میں اذاں اور نماز تنازعہ میں معافی مانگ لی۔ ضلع اُڈپی کے تعلقہ کنڈاپور کے ٹاؤن شنکر نارائنا کے مدر ٹریسا میموریل اسکول نے کھیلوں کے مقابلہ کا اہتمام کیا تھا۔

اس سے قبل کلچرل پروگرام ہوا۔ پیر کے دن اس پروگرام میں طلبا سے مبینہ طورپر نماز ادا کرنے کو کہا گیا۔ لاؤڈ اسپیکر پر اذاں دی گئی۔

اس ایونٹ کا مبینہ ویڈیو وائرل ہونے پر بعض ہندو تنظیموں نے اسکول کے سامنے احتجاج کیا۔ اسکول انتظامیہ نے معافی مانگ لی۔ ایک اور مبینہ ویڈیو میں اسکول کے ایک ٹیچر کو یہ کہتے سنا جاسکتا ہے کہ نماز کا اہتمام فرقہ وارانہ ہم آہنگی اور سماج میں مساوات کو دکھانے کے لئے کیاگیا لیکن اذاں دینا غلط تھا۔

بعض احتجاجیوں نے اس سے اختلاف کیا اور کہا کہ قومی ترانہ اور قومی گیت کے علاوہ بھی قومی اتحاد کا کوئی گیت ہوسکتا ہے۔ بعض ہندو تنظیموں نے منگل کے دن بھی اسکول انتظامیہ کے خلاف مظاہرہ کیا۔ ہندو جن جاگرتی سمیتی کے ترجمان موہن گوڑا نے ہندو طلبا کو نماز ادا کرنے کے لئے مجبور کرنے پر اسکول انتظامیہ کی مذمت کی۔