• 425
    Shares

کراچی :شہر میں بڑھتے ہوئے کورونا کو روکنے کے لیے پورا کراچی بند کرنے پر غور کیا جارہا ہے، جس کا حتمی فیصلہ کل وزیراعلیٰ سندھ مراد علی شاہ کی زیرِ صدارت اجلاس میں ہوگا۔شہر قائد میں لاک ڈاؤن کی تجویز کورونا ٹاسک فورس کے طبی ارکان نے دی تھی۔

انھوں نے کہا تھا کہ کورونا بڑھنے سے اسپتالوں میں جگہ اور آکسیجن کم پڑنے لگی ہے۔دوسری جانب این سی او سی نے کراچی میں مکمل لاک ڈاؤن کی مخالفت کردی۔سربراہ این سی او سی اسد عمر نے کہا تھا کہ ہفتوں ہفتوں شہر بند کرنا مسئلے کا حل نہیں۔

 

دوسری جانب ایپکس کمیٹی کے اجلاس میں وزیراعلیٰ سندھ مراد علی شاہ نے کہا تھا کہ کراچی کورونا سے بری طرح متاثر ہورہا ہے، سخت اقدامات کرنا ہوں گے۔ساتھ میں انھوں نے یہ بھی بتایا کہ تھا کہ اگلے کچھ مہینے بہت اہم ہیں۔ٹاسک فورس ممبران کے مطابق کراچی میں کورونا کیسوں میں اضافہ اور اسپتالوں میں گنجائش انتہائی کم ہورہی ہے۔

انھوں نے کہا تھا کہ گذشتہ دو دنوں میں 370 سے زائد افراد کو اسپتالوں میں داخل کیا گیا۔تاہم انھوں نے کراچی میں مکمل لاک ڈاؤن کی تجویز دی تھی جبکہ مکمل لاک ڈاؤن لگانے پر حتمی فیصلہ کل ہوگا۔خیال رہے کہ کراچی میں شرح 22.6 فیصد رہی، حیدرآباد میں کورونا مثبت کیسوں کی شرح نو فیصد اور سندھ بھر میں مجموعی طورپر شرح 13.4 فیصد ریکارڈ کی گئی۔

ورق تازہ نیوز اب ٹیلی گرام پر بھی دستیاب ہے۔ ہمارے چینل کو جوائن کرنے کے لئے یہاں کلک کریں  https://t.me/waraquetazaonlineاور تازہ ترین خبروں سے اپ ڈیٹ رہیں۔