کانگریس کی بھارت جوڑو یاترا :مہاراشٹر میں ناندیڑ ضلع سے آغاز‘راہول گاندھی کا تین روزہ قیام

529

ناندیڑ: 4ستمبر ( ورقِ تازہ نیوز) کانگریس کے یوتھ لیڈر رکن پارلیمنٹ راہول گاندھی کی قیادت میں 7ستمبر سے بھارت جوڑو یاترا شروع ہورہی ہے۔ اس سلسلے میں پانچ ریاستوں میں سفر کرتے ہوئے مختلف پروگرام منعقد کر نے کے بعد مہاراشٹر میں سب سے پہلے ناندیڑ ضلع میں راہول گاندھی تشریف لائیں گے۔ نومبر کے پہلے و دوسرے ہفتہ کے درمیان کانگریس کے یوتھ لیڈر راہول گاندھی تین دن تک قیام کریں گے۔ یہ یاترا ہنگولی سے ودربھ روانہ ہوگی۔ تاملناڈو ریاست میں کنیاکماری سے کانگریس کی بھارت جوڑو یاترا شروع ہورہی ہے۔

کیرالا، کرناٹک، آندھراپردیش، تلنگانہ ، ان ریاستوں ریاستوں کا دو مہینہ دورہ مکمل ہونے کے بعد نومبر کے پہلے و دوسرے ہفتہ کے درمیان مذکورہ یاترا مدنور سے ناندیڑ ضلع کے دیگلور میں داخل ہوگی۔ اس پس منظر میں یاترا کے ناندیڑ ضلع میں منصوبہ بندی کے لیے اتوار کو منعقدہ میٹنگ میں پارٹی کے سینئر لیڈر موہن جوشی کے علاوہ کانگریس کے ریاستی نائب صدر امرناتھ راجورکر نے پارٹی کارکنان کو تفصیلات سے آگاہ کیا اور ان کی رہنمائی کی۔ ایم ایل اے امرناتھ راجورکر کی دی گئی معلومات کے مطابق راہول گاندھی کافی عرصہ کے بعد ناندیڑ ضلع میں آرہے ہیں۔ یاترا کے سلسلے میں ناندیڑ ضلع میں ان کا تین مختلف مقامات پر مقام رہے گا۔ پہلا مقام دیگلور، بعد ازاں شنکر نگر اور پھر ناندیڑ شہر میں مقام رہے گا۔ یاترا کے درمیان راہول گاندھی کے مقام کے لیے دھرم شالہ، منگل کاریالیہ و دیگر متبادل مقام منتخب کیا جائے گا۔ اسی طرح راہول گاندھی کے قیام و آرام کا بھی مکمل نظم کیا گیا ہے۔

مذکورہ یاترا ناندیڑ ضلع سے ہنگولی ضلع میں جانے سے قبل ناندیڑ شہر میں عظیم ریلی کے ذریعے طاقت کا مظاہرہ کیا جائے گا۔ یاترا کا ناندیڑ ضلع میں تقریباً 110 کلو میٹر سفر رہے گا۔ کانگریس لیڈر اشوک چوہان کے حلقہ انتخابات میں اردھاپور کے قریب شینی پارڈی میں اس یاترا کو ناندیڑ ضلع کانگریس کی جانب سے وداع کیا جائے گا۔ نومبر کے 7 تا 12 تاریخ کے درمیان یاترا کا ناندیڑ ضلع میں مقام رہے گا۔ اس طرح کی ابتدائی معلومات موصول ہوئی۔ دیگلور میں منعقد ہوئی میٹنگ میں ایم ایل اے جتیش انتاپورکر، پارٹی کے ضلع صدر گووند راﺅ شندے ناگیلیکر، ریاستی سیکریٹری شراون ریپن واڑ، دیگلور کے سینئر لیڈر شیواجی راﺅ بلے گاﺅنکر کے علاوہ دیگلور، بلولی و مکھیڑ تعلقہ کے کارکنان بڑی تعداد میں موجود تھے۔