چھتیس گڑھ : سخت گیر ہندو لیڈر کابوتل بم کے ذریعہ قتل ٗعلاقہ میں کشیدگی

603

چکردھر پور: چھتیس گڑھ کے مغربی سنگھ بھوم ضلع کے گری راج سینا کے سرپرست اور سخت گیرہندو نوجوان لیڈر کمل دیو گری ایک بوتل بم سے ہلاک ہو گئے۔ یہ واقعہ ہفتہ کی شام 6:40 بجے چکردھر پور نگر کے بھارت بھون چوک پر واقع پنکچر کی دکان کے قریب پیش آیا۔ جلدی میں مقامی لوگوں نے اسے موقع سے اٹھا کر ریلوے ہسپتال پہنچایا جہاں ڈاکٹروں نے اسے مردہ قرار دے دیا۔

اس کے ساتھ ہی اس واقعہ کی اطلاع ملتے ہی شہر کی تمام دکانوں کے شٹر تیزی سے گرنے لگے۔ یہاں سینکڑوں لوگ ریلوے ہسپتال میں جمع تھے۔ صورتحال کی سنگینی کو دیکھتے ہوئے ڈی ایس پی کپل چودھری سدلبل ریلوے اسپتال پہنچے۔ انہوں نے چکردھر پور تھانے کے انچارج انسپکٹر لکشمن پرساد سے ہر جگہ پولیس فورس تعینات کرنے کو کہا۔

اس کے ساتھ ہی چائباسہ پولیس لائن سے اضافی نفری طلب کر لی گئی۔ اس کے ساتھ ہی ریلوے اسپتال میں متوفی نوجوان لیڈر کمل دیو گری کی والدہ، بھائی پھولن دیو گری، بہن سمیت سینکڑوں حامیوں کے احتجاج سے ماحول مزید گرما گیا۔ اس واقعہ کے بعد ہندوؤں میں کافی غصہ ہے۔ شام تقریباً 7. بجے کمل دیو نے گری کی لاش کو اسٹریچر میں ڈال کر شہر کے مرکزی چوک پون چوک پر لایا۔ یہاں ان کے حامیوں نے جام کیا اور ٹائر وغیرہ جلا کر قتل کے خلاف احتجاج کیا۔ پولیس، انتظامیہ اور نظام کے خلاف شدید نعرے بازی کی گئی۔