چار سال سے گھر کے کمرے میں حسن کی نعش دفن کر رکھی تھی،قاتل نے ایک جنازے میں سچ قبول کیا

1,855

مظفر نگر: اتر پردیش کے مظفر نگر ضلع میں ایک سنسنی خیز معاملہ سامنے آیا ہے۔ 4 سال سے لاپتہ 25 سالہ نوجوان کا کنکال گھر کے ایک کمرے سے ملا ہے۔

معاملہ منصور پور تھانہ علاقہ کے گاؤں نارا کا ہے۔ محمد حسن ولد گبرو 25 نومبر 2018 کو لاپتہ ہو گیا تھا۔ اس کا کنکال گاؤں کے ہی سلمان نامی شخص کے گھر سے برآمد ہوا ہے۔

سلمان نے حسن کے بھائی سلیم سے کہاکہ”اسے مار ڈالا اور اسے گھر کے ایک کمرے میں دفن کر دیا”۔ یہ سن کر سلیم کے پیروں تلے سے زمین نکل گئی۔ ہفتہ کو گاؤں کے لوگوں نے سلیم کیساتھ مل کر سلمان کا کمرہ کھود دیا۔ اس دوران گڑھے سے ایک ہڈیوں کا ڈھانچہ برآمد ہوا۔ اس واقعہ سے علاقہ میں سنسنی پھیل گئی۔

اطلاع ملتے ہی پولیس موقع پر پہنچی اور لاش کو قبضے میں لے کر پوسٹ مارٹم کے لیے بھیج دیا۔ اس معاملے میں ملزم سے پوچھ گچھ کی جا رہی ہے، سی او کھتولی راکیش کمار سنگھ نے بتایا کہ سلیم کا کہنا ہے کہ سلمان کے بیٹے شہاب الدین نے اسے 4 دن پہلے ایک شخص کی آخری رسومات میں بتایا تھا کہ اس کے بھائی کو قتل کرنے کے بعد لاش گھر میں دفن کر دی گئی ہے۔ کھودنے پر ایک کنکال ملا ہے۔ تحریر کی بنیاد پر مقدمہ درج کرکے کارروائی کی جائے گی۔ ملزمان کو حراست میں لے کر پوچھ گچھ کی جا رہی ہے۔