پی ایف آئی کیخلاف کارروائی : جلگاؤں میں اے ٹی ایس کو منہ کی کھانی پڑی

2,866

شہر کی مقامی عدالت میں اے ٹی ایس نے انیس خیام پٹیل نامی شخص کو پیش کیا جس پرعدالت نے فوری طورپر کیس خارج کرکے انہیں رہا کرنے کا حکم دیا ،

پی ایف آئی سے رابطے کے الزام میں مولانا عرفان دولت ندوی اور سعدین اقبال کو گرفتار کرکے کورٹ میں لیجاتے ہوئے ( تصویر : انقلاب)

پیر سےمنگل کے درمیان ریاست کے الگ الگ حصوں میں اے ٹی ایس اور دیگر تفتیشی ایجنسیوں نے دوبارہ چھاپہ مار کارروائی کرتے ہوئے پاپولر فرنٹ آف انڈیا کے مختلف عہدیداروں کو حراست میںلیا لیکن جلگاؤں میں اے ٹی ایس کو منہ کی کھانی پڑی ۔ اے ٹی ایس اس شہر سے انیس خیام پٹیل نامی جس شخص کو تحویل میں لے کر مقامی عدالت میں پیش کیا اس کی خاتون جج نےاے ٹی ایس کے پیش کردہ کیس کو خارج کردیا اورانیس پٹیل کی رہائی کا حکم دیا ۔

جلگائوں شہر اے ٹی ایس کے دستے نے مقامی پولیس کے ساتھ مسلم اکثریتی بستی مہرون کے اقصیٰ نگرمیں چھاپے مار کاروائی کر انیس عمر خیام پٹیل(۳۱) ، ساکن اقصیٰ نگر، جلگاؤں، کو حراست میں لیا ہے۔ پٹیل کے خلاف کوئی مقدمہ درج نہیں کیاگیا ہے،اس کے خلاف سی آرپی سی ۱۵۱(۳)کےتحت احتیاطی کارروائی کی گئی ہے۔

معلوم ہوا ہے کہ اے ٹی ایس نےانیس پٹیل پی پر ایف آئی تنظیم میں فزیکل ٹیچر ہونے کا اورکئی دنوں سے اس تنظیم کیلئے کام کر نےکا الزام عائد کیا تھا۔

اطلاع کے مطابق جب اسے مقامی کورٹ میں خاتون جج جےایس کھیڑ کر کی عدالت میںپیش کیا گیا تو کورٹ نے کیس کو خارج کردیا اور انیس پٹیل کی رہائی عمل میں آئی ۔اس ضمن میں انیس پٹیل کے دفاعی وکیل نے نام نہ ظاہر کرنے کی شرط پر بتایا کہ اے ٹی ایس نے انیس پٹیل کے پی ایف آئی کے فزیکل ٹیچر ہونے کا دعویٰ کیا تھا اور ۱۵ ؍دنوں کیلئے تحویل کی اجازت مانگی تھی ۔

اس پر ہم نے کورٹ کو ان کے فزیکل ٹیچر ہونے اور اس بات کے ثبوت پیش کئے وہ کسی طرح کوئی غیر قانونی سرگرمیوں میں ملوث نہیں ہیں جسےتسلیم کرتے ہوئے کورٹ نے اے ٹی ایس کی درخواست کو نامنظور کیا اور یہ احکامات جاری کئے کہ نوراتری کے ۱۵ ؍ دنوں تک پٹیل ایم آئی ڈی سی پولیس اسٹیشن میں حاضری دیں ۔

اطلاع کے مطابق جلگائوں اے ٹی ایس اورایم آئی ڈی سی پولیس کو ممبئی کے کالا چوکی پولیس اسٹیشن میں درج کیس کے سلسلے میں یہ کارروائی کرنے کی ہدایت تھی ۔اس کے بعدجلگائوں اے ٹی ایس اورایم آئی ڈی سی پولیس اور مقامی کرائم برانچ کی ایک مشترکہ ٹیم نےمنگل کی شب ساڑھے تین بجے پھرچھاپہ مار کارروائی کی ۔اس کاروائی میں انیس عمر خیام پٹیل کو ان کے گھر سے گرفتار کیا گیا۔انیس پٹیل کے ساتھ شہادہ کے ایک نوجوان کو بھی اے ٹی ایس نے گرفتار کیا تھا، اُسے پوچھ گچھ کے بعد چھوڑ دئیے جانے کی اطلاع ضلع سپرنٹنڈینٹ آف پولیس ڈاکٹرپروین منڈھے نے دی ہے۔

منڈھے کے مطابق پٹیل کے خلاف آر پی سی۱۵۱(۳) کےتحت احتیاطی کارروائی کی گئی اوراسے مقامی کورٹ میں پیش کیا گیا ۔جلگاؤں انسداد دہشت گردی برانچ کے سربراہ چندرکانت پاٹل، ایم آئی ڈی سی پولیس اسٹیشن کے انسپکٹر پرتاپ شکارے اور مقامی کرائم برانچ کے اسسٹنٹ انسپکٹر جالیندر پالے کی مشترکہ ٹیم نے یہ کارروائی کی۔۔ بشکریہ : روزنامہ انقلاب ممبئی