• 425
    Shares

امریکی محکمہ دفاع کا کہنا ہے کہ پینٹاگون کے ماس ٹرانزٹ ٹرمینل پر فائرنگ سے ایک پولیس اہلکار ہلاک اور کئی افراد زخمی ہو گئے ہیں۔خبر رساں ادارے اے ایف پی کے مطابق منگل کو اس واقعے نے امریکی فوج کے ہیڈکوارٹر کو بند کرنے پر مجبور کر دیا تھا۔واشنگٹن کے قریب واقع آرلنگٹن میں پینٹاگون کی عمارت کے قریب ایک بس اور سب وے سٹیشن میں گولیاں چلنے کے بعد عمارت میں کام کرنے والے افراد کو ایک گھنٹے سے زائد وقت کے لیے ایک جگہ پر پناہ لینے کا حکم دیا گیا۔

حکام کا کہنا تھا کہ واقعہ کے 90 منٹ بعد جائے وقوعہ کو محفوظ کر لیا گیا۔ تاہم انہوں نے اس کی تفصیلات دینے سے انکار کر دیا۔عمارت کے گرد گشت کرنے والی پینٹاگون فورس پروٹیکشن ایجنسی کے سربراہ ووڈرو کُس کا کہنا تھا کہ ’معاملہ ختم ہوگیا ہے، جائے وقوعہ محفوظ ہے اور سب سے اہم یہ کہ ہماری کمیونٹی کو کوئی مسلسل خطرہ نہیں ہے۔‘

ان کا کہنا تھا کہ کئی افراد زخمی ہوئے ہیں لیکن انہوں نے ان رپورٹس کی نہ تصدیق کی نہ تفصیلات دیں کہ ہلاک ہونے والے افسر کو چھرا مارا گیا اور حملہ آور کو گولی مار کر ہلاک کر دیا گیا ہے۔خبر رساں ادارے روئٹرز کے مطابق انہوں نے حملے کے مقصد کے بارے میں کوئی قیاس آرائی نہیں کی نہ یہ بتایا کہ آیا حملہ آور پولیس کی حراست میں ہے۔ تاہم انہوں نے یہ کہا کہ حکام حملہ آور کی تلاش نہیں کر رہے۔
ان کا کہنا تھا کہ فیڈرل بیورو آف انویسٹی گیشن معاملے پر تحقیقات میں مدد کر رہا ہے۔اے ایف پی کے مطابق وزیر دفاع لائڈ آسٹن نے ایک بیان میں کہا ہے کہ ’مذکورہ افسر ڈیوٹی کے دوران ہلاک ہوئے جس وہ روزانہ پینٹاگون میں کام کرنے والے ہزاروں افرد کی مدد کررہے تھے۔‘

ان کا مزید کہنا تھا کہ ’وہ اور ان کے دیگر افسر پینٹاگون فیملی کا حصہ ہیں اور ہم سب انہیں پروفیشنل، ہنر مند اور بہادر افراد کے طور پر جانتے ہیں۔‘لائڈ آسٹن نے کہا کہ واقعہ کی تحقیقات جاری ہیں اور یہ ’بغیر کسی رکاؤٹ اور قیاس آرائی کے جاری رہنی چاہیے۔‘’میں نے ہلاک ہونے والے افسر کے اعزاز میں پینٹاگون ریزرویشن پر پرچم کو سرنگوں کرنے کا حکم دیا ہے۔‘واقع کے پیش نظر آرلنگٹن میں سب وے سروس کو عارضی طور پر معطل کر دیا گیا تھا اور رہاں جانے والی بسوں کو دیگر سٹاپس کی طرف بھیج دیا گیا تھا۔
ہلاک ہونے والے افسر کو واشنگٹن میں جارج واشنگٹن یونیورسٹی ہسپتال لے جایا گیا تھا، جہاں پولیس کی بڑی تعداد جمع تھی۔

ورق تازہ نیوز اب ٹیلی گرام پر بھی دستیاب ہے۔ ہمارے چینل کو جوائن کرنے کے لئے یہاں کلک کریں  https://t.me/waraquetazaonlineاور تازہ ترین خبروں سے اپ ڈیٹ رہیں۔