پیسے مانگنے کے لیے جعلی کلون فیس بک پروفائل بنانے والے دھوکے بازوں سے ہوشیار رہیں : اپنے فیسبک پروفائل کو دھوکہ بازوں سے کیسے بچائے پڑھئے

1,401

ممبئی: کوویڈ 19 وبائی بیماری کا فائدہ اٹھاتے ہوئے جس میں لوگوں کو مالی بحران کا سامنا کرنا پڑا اور اپنے عزیزوں سے جڑے رہنے کے لیے سوشل میڈیا پر انحصار کیا، سائبر مجرموں اور دھوکہ بازوں نے انہیں پھنسانے کے نئے طریقے نکالے۔

ماضی قریب میں، بہت سے شہر کے رہائشی سائبر کرائمز کا شکار ہوئے جس میں جعلسازوں نے اپنے جعلی فیس بک پروفائلز بنائے اور ان کی تصاویر کا استعمال کرتے ہوئے اپنے رابطوں سے پیسے مانگے۔ زیادہ تر معاملات میں، جعلسازوں نے مالی بحران کے دعوے کیے اور رقم کی منتقلی کے لیے ای-والیٹس کے لنکس کا اشتراک کیا۔

شہر کے ایک پرائیویٹ کالج کے پرنسپل نے کہا، ’’کچھ دن پہلے مجھے اپنے دوست کا فون آیا، جس میں پوچھا گیا کہ کیا خاندان میں سب کچھ ٹھیک ہے؟ پھر اس نے مجھے بتایا کہ اسے میرے فیس بک پروفائل سے ایک پیغام موصول ہوا ہے جس میں کہا گیا ہے کہ مجھے فوری طور پر 5000 روپے کی ضرورت ہے۔ میں نے اسے بتایا کہ میں نے ایسا کوئی پیغام نہیں بھیجا تھا۔ اس نے اس پروفائل کا ایک لنک شیئر کیا، جو اصل سے ملتا جلتا تھا۔

دھوکہ باز نے میرے دوسرے دوستوں اور رشتہ داروں کو بھی پیغامات بھیجے تھے۔ میں نے فوری طور پر فیس بک کو پروفائل کی اطلاع دی اور اپنے تمام رابطوں کو الرٹ رہنے کے لیے براڈکاسٹ میسج بھی بھیجا۔ اگرچہ پروفائل بلاک کر دیا گیا تھا، میں نے محسوس کیا کہ میری فیس بک پروفائل سیکورٹی بہت کمزور تھی. میں نے سیکیورٹی کی ترتیبات کو تبدیل کیا اور اپنے پروفائل کو محفوظ کیا۔ خوش قسمتی سے، میرے دوستوں اور رشتہ داروں میں سے کسی نے بھی چالباز کو ادائیگی نہیں کی۔

ایک اور مثال میں، شہر کے ایک اسکول کی پرنسپل کو اپنی طالبہ کے پروفائل سے ایسا ہی پیغام موصول ہوا۔ اس نے کہا، "لاک ڈاؤن کے دوران، مجھے اپنے طالب علم کی طرف سے پیغام ملا کہ کوویڈ 19 کی وجہ سے وہ بے گھر ہو گیا ہے اور اسے پیسوں کی ضرورت ہے۔ مجھ سے اس کے ای والٹ میں 2,000 روپے منتقل کرنے کو کہا گیا۔ تھوڑی دیر تک میں نے اس پر یقین کیا، لیکن پھر میں نے تصدیق کے لیے طالب علم کو فون کیا اور معلوم ہوا کہ یہ جعلی پروفائل ہے۔ کچھ دن پہلے کسی نے میرے شوہر کے دو جعلی پروفائل بنائے تھے۔ ہم نے اس کی اطلاع دی اور اپنے تمام رابطوں کو بھی محتاط رہنے کے لیے آگاہ کیا۔

بستی جودھیوال کے ایک رہائشی نے بتایا، "دھوکہ بازوں نے میرے ایک جعلی پروفائل کا استعمال کرتے ہوئے میرے دوست سے 25،000 روپے مانگے، یہ کہہ کر کہ میرے خاندان کا فرد کورونا وائرس کی وجہ سے ہسپتال میں داخل ہے۔ میں نے فیس بک کو اطلاع دی اور پروفائل بلاک کر دیا۔

پروفائل کیسے محفوظ کریں

سائبر سیکیورٹی ماہر رکشیت ٹنڈن نے کہا، "یہ وہ لوگ ہیں جنہوں نے اپنے فیس بک اکاؤنٹ پر ضروری سیکیورٹی سیٹنگز کو ایکٹیویٹ نہیں کیا ہے۔ ہر کسی کو آپ کی تصاویر تک رسائی کی اجازت دینا، رابطہ فہرست اس طرح کے فراڈ کا باعث بن سکتی ہے۔ اپنے اکاؤنٹس کو محفوظ رکھنے کا واحد طریقہ یہ ہے کہ آپ اپنی معلومات کو مقفل کر دیں۔ ان دنوں فیس بک نے نامعلوم افراد کے لیے آپ کی پروفائل کو لاک کرنے کا آپشن دیا ہے، جو کافی مددگار ہے

فیس بک پروفائل کو کیسے لاک کریں (2022) | دوستو، اگر آپ بھی فیس بک استعمال کرتے ہیں اور اپنے پروفائل یا اکاؤنٹ کی سیکیورٹی کے بارے میں پریشان ہیں تو یہ مضمون صرف آپ کے لیے ہے۔ فیس بک کا ایک خاص فیچر ہے جس کی مدد سے آپ اپنا پروفائل لاک کر سکتے ہیں۔ اگر آپ بھی اپنے فیس بک اکاؤنٹ کو غلط لوگوں سے محفوظ رکھنا چاہتے ہیں تو اس آرٹیکل کو آخر تک پڑھیں۔

فیس بک ایک مشہور سوشل نیٹ ورکنگ پلیٹ فارم بن گیا ہے۔ اس کے ساتھ ہی کچھ برے لوگ اس کا غلط استعمال کرنے لگے۔ لائیک- لوگوں کی پروفائل تصویر چرا کر، گندی تصاویر بنا کر، پرتشدد اور گمراہ کن پیغامات بنا کر، جعلی ویڈیوز اور تصاویر وغیرہ بنا کر میمز بنانا۔ اسی وجہ سے فیس بک نے یہ فیچر لانچ کیا۔ آئیے اس فیچر کے بارے میں مزید جانتے ہیں۔

فیس بک پروفائل لاک کیا ہے؟

یہ فیچر فیس بک کی جانب سے مئی 2020 میں آیا تھا۔ اس کے تحت فیس بک صارف اپنا پروفائل لاک کر سکتا ہے۔ اس کے بعد صرف آپ کے فیس بک کے دوست ہی آپ کی تصاویر، پوسٹس، فل سائز پروفائل فوٹو، کور فوٹو اور کہانیاں دیکھ سکیں گے۔ دوسرے لوگ صرف آپ کا پروفائل تلاش کر سکتے ہیں اور دوستی کی درخواستیں بھیج سکتے ہیں۔

یہ فیچر آپ کے فیس بک پروفائل کی سیکیورٹی کے لیے بہت اہم ہے۔ تاکہ کوئی بھی آپ کی تصاویر اور ویڈیوز کا غلط استعمال نہ کر سکے۔ اس کے علاوہ کوئی بھی ان تمام چیزوں کا اسکرین شاٹ نہیں لے سکے گا۔ اب آئیے اسے ایکٹیویٹ کرنے کا طریقہ جانتے ہیں.