پیدل سفر حج پرجارہے شہاب چتور کو پاکستان کا ویزہ دینے سے انکار ، شاہی امام نے نریندر مودی کوای میل بھیجا

4,640

لدھیانہ :(ایجنسیز)شاہی امام پنجاب مولانا محمد عثمان رحمانی لدھیانوی نے اتوار کے روز مجلس احرار اسلام کے ہیڈکوارٹر میں کہا کہ شہاب چتور، جو کیرالہ سے مکہ پیدل حج کے لیے جا رہے تھے، کو حکومت پاکستان نے ان کے ملک سے گزرنے کی اجازت دینے سے انکار کر دیا ہے۔

شاہی امام مولانا عثمان لدھیانوی نے کہا کہ شہاب چتور ان دنوں پنجاب سے گزر رہے ہیں، اس لیے ان سے کئی بار ملاقات ہوئی۔ یہ بات سامنے آئی ہے کہ دہلی میں پاکستانی سفارتخانے نے عازم حج کے ساتھ پیدل دھوکہ کیا ہے۔

دہلی میں پاکستانی سفارتخانے نے پہلے شہاب چتور کو یقین دلایا کہ آپ پیدل سفر حج شروع کریں، جب آپ پاک بھارت سرحد کے قریب پہنچیں گے تو آپ کو پاکستان کا ویزہ دے دیا جائے گا، پھر پاکستانی سفارت خانے نے دلیل دی کہ پہلے ویزہ دینے سے اس کی مدت ختم ہو جائے گی۔ اس لیے شہاب چتور کو سرحد پر پہنچتے ہی ویزا دے دیا جائے گا۔

شاہی امام پنجاب نے کہا کہ جب شہاب چتور تقریباً تین ہزار کلومیٹر پیدل سفر کر کے واہگہ بارڈر کے قریب پہنچے ہیں تو حکومت پاکستان نے اب اپنی عادت کے مطابق ویزا دینے سے صاف انکار کر دیا ہے۔ پاکستانی حکام کے اس رویے سے حیران ہیں۔ دھوکہ دہی پاکستان کی پرانی عادت ہے۔ شاہی امام نے کہا کہ ہندوستان کے مسلمانوں نے حکومت پاکستان سے کبھی کچھ نہیں چاہا، 75 سال میں پہلی بار جب کوئی ہندوستانی مسلمان پیدل حج کے لیے مکہ شریف جارہا ہے تو پاکستان اسے گزرنے کی اجازت بھی نہیں دینا چاہتا۔

آخر حکومت پاکستان شہاب چتور کو صرف اس لیے ٹرانزٹ ویزا کیوں نہیں دے رہی کہ وہ ہندوستانی مسلمان ہے۔ شاہی امام نے کہا کہ حکومت پاکستان کو شرم آنی چاہیے، دنیا بھر میں اسلام کے نام پر فخر کرنے والا ملک شہاب چتور کے حج کے راستے میں رکاوٹیں ڈال رہا ہے۔

مولانا عثمان نے بتایا کہ انہوں نے اس موضوع پر وزیر اعظم نریندر مودی کو ای میل کے ذریعے خط لکھا ہے اور مطالبہ کیا ہے کہ بھارتی حکومت شہاب چتور کو پاکستان کے بجائے چین کے راستے مکہ جانے میں مدد کرے، تاکہ اسلامی ممالک کے سامنے پاکستان کے شہاب چتور کی مدد کی جائے۔ پوری دنیا پاکستان کا جعلی چہرہ بے نقاب کرے۔