نئی دہلی : پٹرول کی قیمتوں کو لے کر پورے ملک میں تشویش پائی جا رہی ہے اور سوشل میڈیا پر بڑھتی قیمتوں کے خلاف ہنگامہ مچا ہوا ہے۔اس درمیان خبر ہے کہ پٹرول کی قیمتوں میں پھر اضافہ دیکھا جا ر ہاہے۔ دہلی میں پٹرول کی قیمتوں میں 39 پیسوں کا اضافہ ہوا ہے اور دہلی میں اب پٹرول کی قیمت 90 روپے 58 پیسے فی لیٹر ہو گئی ہے۔ اسی کے ساتھ ڈیزل کی قیمتوں میں بھی 37 پیسوں کا اضافہ ہوا ہے جس کے بعد دہلی میں 80 روپے 97 پیسے فی لیٹر ڈیزل ہوگیا ہے۔ پٹرول کی قیمتوں میں اضافہ لگاتار 12ویں دن دیکھنے میں آیا ہے۔واضح رہے ممبئی میں پٹرول کی قیمت 97روپے فی لیٹر ہے جبکہ ڈیزل کی قیمت 88روپے سے زیادہ ہے۔ممبئی کے بعد سب سے زیادہ قیمت کولکتہ میں ہیں جہاں یہ 95روپے سے زیادہ ہے۔ اسی طرح ملک کے تمام بڑے شہروں میں پٹرول اور ڈیزل کی قیمتوں میں اضافہ کا رجحان نظر آ رہا ہے۔واضح رہے ڈیزل کی قیمتوں میں اضافہ کی وجہ سے تمام ضروری اشیاء کی قیمتوں میں اضافہ نظر آ رہا ہے۔ ادھر گھریلو گیس کی قیمتوں میں بھی اضافہ ہوا ہے جس کی وجہ سے عوام میں بے چینی اور غصہ نظر آ رہا ہے۔واضح رہے عالمی منڈی میں تیل کی قیمتوں میں کمی برقرار ہے لیکن عائد ڈیوٹی کی وجہ سے قیمتوں میں مستقل اضافہ ہو رہاہے۔ ملک کی جن معروف ہستیوں نے سابق وزیر اعظم منموہن سنگھ کے زمانہ میں تیل کی قیمتوں کو لے کر حکومت کی تنقید کی تھی آج ان کی خاموشی ان کی تنقید کی وجہ بن رہی ہے۔


اپنی رائے یہاں لکھیں