پاکستان سری لنکا کے راستے پر نکل گیا ہے، عمران خان

چیئرمین پاکستان تحریک انصاف (پی ٹی آئی) عمران خان کا کہنا ہے کہ پنجاب میں حکومت کہیں دکھائی نہیں دیتی، ہرطرف مجرم مافیا دندناتا دکھائی دے رہاہے۔

انہوں نے کہا کہ وزیراعظم کا کرپٹ بیٹا ڈھونگ انتخاب سے پنجاب میں اقتدارپرقابض ہوا، پاکستان کاسب سے زیادہ آبادی والا صوبہ مکمل سیاسی انتشار کی زد میں ہے، لوگ مشکلات کا شکار ہیں،کسانوں کی فصلیں بھی خطرے سے دوچار ہیں۔

عمران خان نے کہا کہ لانگ مارچ کے دوران عوام کا سمندر دیکھ کر ان کی ’کانپیں ٹانگنا‘ شروع ہوگئی تھیں، انھوں نے دو ماہ میں جتنی مہنگائی کی ہم نے ساڑھےتین سالوں میں نہیں کی، بجلی، پیٹرول غائب ہیں، روپیہ بھی گر رہا ہے، ملک تیزی سے آگے جارہا تھا چوروں نے سازش کرکے ہماری حکومت گرائی۔

سابق وزیراعظم نے کہا کہ بجلی کے یونٹ کی قیمت مزید بڑھنی ہے، ہمیں صاف و شفاف الیکشن چاہئیں،الیکشن کمیشن شفاف الیکشن نہیں کراسکتا، شہباز شریف کی جتنی بھی ڈیولپمنٹ تھی وہ اشتہاروں میں تھی۔

انہوں نے دعویٰ کیا کہ پاکستان کی دو سال میں وہ ترقی ہوئی تھی جو 30 سال میں نہیں ہوئی تھی،ٹیکس وصولی ریکارڈ تھی، فصلیں ریکارڈ تھیں، ملک تیزی سے آگے جارہا تھا، ہماری برآمدات 10 فیصد گرگئیں، ترسیلات زر بھی گر گئی ہیں۔

عمران خان نے کہا کہ پاکستان سری لنکا کے راستے پر نکل گیا ہے۔ سابق وزیراعظم نے مزید کہا کہ وفاقی تحقیقاتی ایجنسی (ایف آئی اے) شہباز شریف اور اس کے بیٹوں کی کرپشن کی تحقیقات کر رہا تھا، صحافیوں کو دھمکیاں مل رہی ہیں، میڈیا ہاؤسز کو دھمکیاں مل رہی ہیں، خود مجھ پر 8 ایف آئی آرز کٹی ہوئی ہیں۔

انہوں نے کہا کہ شہباز شریف نے نوکروں کے نام پر 16 ارب روپیہ لیا، پہلی باری چپڑاسی گلزار کی آئی وہ اللہ کو پیارا ہوگیا،دوسرے کی باری آئی وہ بھی اللہ کو پیارا ہوگیا، تیسری غلام شبیر کی باری آئی تو وہ بھی دل کا دورہ پڑنے سے گیا، مقصود چپڑاسی کو غلام شبیر پیسے ٹرانسفر کرتا تھا۔