ویڈیو: جہاں کمزور کو دبایا جائے ، کیا ہم نے ایسے ملک کا خواب دیکھا تھا: نصیر الدین شاہ

0 16

انسانی حقوق پر نظر رکھنے والی تنظیم ایمنسٹی انڈیا نے غیر سرکاری تنظیموں کے خلاف حکومت کی مبینہ کارروائی کی مخالفت میں جمعہ کے روز2.13 منٹ کا ایک ویڈیو جاری کیا۔

اس میں اداکار نصیر الدین شاہ نے دور حاضر کے حالات پر پھر سے اظہار خیال کیا۔انہوں نے کہاکہ ‘ہمارے آزاد ملک کا آئین ہند 26نومبر 1949لاگو ہوا ۔ پہلی ہی سطروں میں اسکے بنیادی اصول واضح کر دیئے گئے، جنکا مقصد یہ تھا کہ انڈیا کے ہر ایک شہری کو سماجی ، معاشی ، اور سیاسی انصاف مل سکے لیکن آج کے حالات ایسے ہیں کہ ”اب حق کے لئے آواز اٹھانے والے جیلوں میں بند ہیں، کلاکار ، فنکار، ادیب ، شاعر سب کے کام پر روک لگائی جارہی ہے۔جر نلسٹ کو بھی خاموش کیا جارہا ہے ۔مذہب کے نام پر نفرتوں کی دیواریں کھڑی کی جارہی ہیں، معصوموں کا قتل ہورہا ہے ۔پورے ملک میں نفرت اور ظلم کا بے خوف ناچ جاری ہے ۔ اور ان سب کے خلاف آواز اٹھانے والوں کے دفتروں پر ریڈ کر کے ،انکے لائسنس کینسل کر کے، انکے بنک اکاؤنٹ فریز کر کے انہیں خاموش کیا جا رہا ہے ،تاکے وہ سچ بولنے سے باز آجائیں۔ہمارے آئین کی کیا یہی منزل ہے۔ کیا ہم نے ایسے ہی ملک کے خواب دیکھے تھے ۔ جہاں اختلاف کی کوئی گنجائش نہ ہو ، جہاں صرف امیر اور طاقتور کی ہی آواز سنی جائے ۔جہاں غریب اور کمزور کو ہمیشہ کچلا جائے ۔ جہاں کبھی قانون تھا لیکن اب بس اندھیرا ہے۔

ویڈیو لنک