وہ ملک جہاں ایک دلہن کے ساتھ دوسری مفت ملتی ہے۔انکار کرنے پر دولہے کو سزا ملتی ہے

6,024

دنیا کے ہر ملک میں شادی کے حوالے سے مختلف رسم و رواج اور قوانین ہیں۔ ہندوستان میں جہاں یک زوجیت کا قانون ہے۔ اس کے ساتھ ہی براعظم افریقہ میں ایک ایسا ملک بھی ہے جہاں ہر مرد کے لیے دو شادیاں کرنا لازمی ہے۔ اگر وہ ایسا کرنے سے انکار کرتا ہے تو اسے جیل بھیجا جا سکتا ہے۔

لڑکی بھی انکار نہیں کر سکتی۔ اسے بھی سزا ملتی ہے۔ اب آپ سوچ رہے ہوں گے کہ کون سا ملک ہے جہاں ایسا ظالمانہ قانون ہے۔ دو شادیاں خوشی سے کرنا ضروری ہے یا غمگین دل سے براعظم افریقہ میں واقع اس ملک کا نام اریٹیریا ہے۔

یہاں ہرمرد کو دو بار دولہا بننا پڑتا ہے، اگر یہاں کے مرد شادی کرنے والے ہیں تو پہلے وہ دو لڑکیوں کو ایک ساتھ پسند کرنے کی کوشش کرتے ہیں اور دونوں سے ایک ساتھ شادی کرسکتے ہیں۔ یا انہیں ایک شادی کے بعد دوسری شادی کرنی پڑے گی۔ اب یہ لوگ خوش دل سے کریں یا غمگین دل سے۔ ایسا کرنا ان پر لازم ہے۔

دو شادیوں سے انکار پر جیل کی سزا

اگر مرد دو بیویاں رکھنے سے انکار کرے تو وہاں کا قانون سزا دی جاتی ہے۔ یہاں کسی کو عمر قید کی سزا سنائی جاتی ہے۔ یہی نہیں، اگر لڑکی کسی ایسے شخص سے شادی کرنے سے انکار کرتی ہے جس کی شادی ہو چکی ہے، تو اسے بھی سزا دی جاتی ہے۔

قانون لڑکیوں کی وجہ سے بنا

اریٹیریا میں یہ قانون خواتین کی وجہ سے بنایا گیا ہے۔ دراصل اس ملک میں لڑکیوں کی تعداد مردوں سے زیادہ ہے۔ مردوں کی نسبت لڑکیوں کی تعداد دوگنی ہے۔ وہ کنواری نہ رہے جائے اسلئے ایسا قانون بنایا گیاہے۔ اریٹیریا کی ایتھوپیا کے ساتھ خانہ جنگی جاری ہے جس کی وجہ سے یہاں خواتین کی تعداد زیادہ ہے۔ وہاں کی حکومت نے یہ فیصلہ اس لیے لیا تاکہ عورت شادی کے بغیر نہ رہے۔