وزیر اعظم کی ریلی کے بعد پتھراؤ میں مرنے والے کانسٹیبل کے بیٹے کا درد: پولیس اپنی حفاظت نہیں کر سکتی، ان سے کیا توقع کریں؟

0 19

نئی دہلی، 30 دسمبر.
(پی ایس آئی)

اتر پردیش کے غازی پور میں پی ایم نریندر مودی کی ریلی کے بعد مشتعل ہجوم کے پولیس ٹیم پر پتھراؤ میں ایک سپاہی کی موت ہو گئی جبکہ دو پولیس اہلکار زخمی ہوئے ہیں. اس معاملے میں اب پولیس نے بڑی کارروائی کی ہے. پولس نے کانسٹیبل کی موت کے معاملے میں 32 لوگوں کے خلاف نامزد ایف آئی آر درج کی ہے. وہیں، موحوم کانسٹیبل سریش وتس کے بیٹے وی پی سنگھ نے پولیس کی سیکورٹی کے نظام پر ہی سوال اٹھا دیے. بتایا جا رہا ہے کہ پولیس کانسٹیبل کی موت نشاد پارٹی کے کارکنوں کی طرف سے کمبینہ طور پر پتھر بازی سے ہوئی ہے.

غازی پور میں پتھراؤ میں اپنی جان گنوانے والے سریش وتس کے بیٹے وی پی سنگھ نے کہا کہ ‘پولیس اپنی حفاظت کرنے کے قابل نہیں ہے. ہم ان سے کیا توقع کر سکتے ہیں؟ اب معاوضہ لے کر ہم کیا کریں گے؟ اس سے پہلے بھی بلندشہر اور پرتاپ گڑھ میں ایسی وارداتیں ہو چکی ہیں. ‘ بتا دیں کہ وزیر اعلی یوگی آدتیہ ناتھ نے مردہ سپاہی کے اہل خانہ کو 50 لاکھ روپے کی مالی مدد، ایک لواحقین کو نوکری اور غیر معمولی پنشن دیئے جانے کی ہدایات دیئے ہیں.

وہیں، کانسٹیبل کی موت پر غازی پور سٹی کے سی او ایم پی پاٹھک نے کہا کہ 32 لوگوں کے خلاف نامزد ایف آئی آر کی گئی ہے. اس کے علاوہ 60 نامعلوم کے خلاف بھی مقدمہ درج کیا گیا ہے. کچھ لوگوں کو گرفتار بھی کیا گیا ہے. بتا دیں کہ غازی پور ضلع میں وزیر اعظم کی ریلی کے بعد واپس آ رہی گاڑیوں پر ہفتہ کو ایک مقامی پارٹی کے کارکنوں نے پتھراؤ کر دیا. اس پتھراؤ میں ایک پولیس سپاہی کی موت ہو گئی.
دراصل، سریش وتس مقامی نونہارا پولیس اسٹیشن پر تعینات تھے. ہفتہ کو وزیر اعظم مودی کی ریلی کے مقام پر ان کی ڈیوٹی لگی تھی. سریش اور ان کی ٹیم جب واپس لوٹ رہی تھی. تبھی ان کے پاس وائرلیس سے پیغام آیا کہ نشاد برادری کے لوگوں کا مظاہرہ ہو رہا ہے، ان کی سمجھا-بجھا کر معاملہ ختم کرایا جائے. دراصل نشاد برادری کے لوگ وزیر اعظم کے دورے کے پیش نظر مختلف ریزرویشن کی مانگ کو لے کر مظاہرہ کر رہے تھے، جس میں ان کے کچھ لیڈروں کی گرفتاری بھی ہوئی تھی. گرفتاریوں کے خلاف ہی فرقہ کے لوگ دوبارہ سڑکوں پر تھے. جب پولیس ٹیم نے انہیں راستے سے ہٹانے کی کوشش کی، تو ہجوم نے پتھر پھینکنا شروع کر دئے، جس میں کانسٹیبل سریش وتس کی موت ہو گئی.