نئی دہلی، 12 دسمبر (یو این آئی) ٹویٹر نے وزیر اعظم نریندر مودی کے ٹوئٹر اکاؤنٹ کو کچھ دیر کے لیے ہیک ہونے کے بعد اسے محفوظ بنانے کے لیے ضروری اقدامات کیے ہیں۔ ٹوئٹر کے ایک ترجمان نے اتوار کو یہ اطلاع دی۔
ترجمان نے کہا’’ ہمارے پاس وزیر اعظم آفس کے ساتھ ہر وقت رابطے کی سہولیات موجود ہیں۔ جیسے ہی ہمیں اس سرگرمی (ٹوئٹر اکاؤنٹ کی ہیکنگ) کے بارے میں معلوم ہوا، ہماری ٹیم نے اکاؤنٹ کو محفوظ بنانے کے لیے ضروری اقدامات کیے‘‘۔

انہوں نے کہا کہ "ہماری تحقیقات سے معلوم ہوا ہے کہ اس وقت کسی اور مسئلے کے آثار نہیں ہیں۔”خیال ر ہے وزیر اعظم مودی کا ٹویٹر ہینڈل ہفتے کی شب دیر گئے کچھ دیر کے لیے ہیک کر لیا گیا تھا اور اس دوران بٹ کوائن کی قانونی شناخت کے بارے میں ایک ٹویٹ کیا گیا تھا۔

وزیر اعظم کے دفتر (پی ایم او) نے آج صبح یہ اطلاع دی۔ مسٹر مودی کا ٹوئٹر اکاؤنٹ ہیک ہونے کے فورا بعد ہی اسے بحال اور محفوظ کر لیا گیا ہے اور اس معاملے کو ٹوئٹر کے ساتھ اٹھایا گیا ۔پی ایم او نے ٹویٹ کیا’’وزیر اعظم نریندر مودی کا ٹوئٹر ہینڈل تھوڑی دیر کے لیے ہیک ہو گیا۔ یہ معاملہ ٹوئٹر کے ساتھ اٹھایا گیا اور اکاؤنٹ کو فوری طور پر بحال اور محفوظ کر دیا گیا ہے۔ ہیک ہونے کے دوران کی گئی ٹویٹس کو نظر انداز کردیں‘‘۔

ہیک ہونے کے بعد پہلا ٹویٹ چند منٹ بعد ڈیلیٹ کر دیا گیا اور وہی ٹویٹ ایک بار پھر پوسٹ کر دی گئی۔ اس کے بعد اس ٹویٹ کو بھی ہٹا دیا گیا۔کچھ صارفین نے مسٹر مودی کا ٹوئٹر اکاؤنٹ ہیک ہونے کے بعد کی گئی ٹویٹس کے اسکرین شاٹس شیئر کیے ہیں۔ہیک کیے گئے ٹویٹر اکاؤنٹ میں لکھا گیا’’ ہندوستان نے باضابطہ طور پر بٹ کوائن کو قانونی حیثیت دے دی ہے اور حکومت بھی 500 بی ٹی سی خرید کراسے لوگوں میں تقسیم کر رہی ہے‘‘۔

ورق تازہ نیوز اب ٹیلی گرام پر بھی دستیاب ہے۔ ہمارے چینل کو جوائن کرنے کے لئے یہاں کلک کریں  https://t.me/waraquetazaonlineاور تازہ ترین خبروں سے اپ ڈیٹ رہیں۔