ناندیڑ:89لاکھ کے موبائل گھوٹالہ معاملے میں وینکٹشورا موبائل شاپ کے مالک 25مئی تک پولس کسٹڈی ریمانڈ

0 9

ناندیڑ:22مئی (ورق تازہ نیوز)وینکٹیشوارا موبائل شاپ کے مالک جسے مالیاتی جرائم برانچ نے 89 لاکھ روپے کے موبائل گھوٹالے کے معاملے میں پکڑا تھا، کو فرسٹ کلاس مجسٹریٹ نے تین دن کے لیے پولیس حراست میں بھیج دیا ہے۔سال 2020 میں ناندیڑ کے وزیر آباد پولیس اسٹیشن میں شبھم پاملو کی درج کرائی گئی شکایت پرمقدمہ نمبر 89/2020 درج کیا گیا تھا۔ کیس کو ناندیڑپولس کی مالیاتی جرائم برانچ کے حوالے کر دیا گیا تھا۔ اس شکایت کے مطابق، کم قیمت پر زیادہ قیمت کے موبائل دینے کا لالچ دیا گیا تھا. یہ تمام کام ویب سائٹ سب سے سستا ڈاٹ کام پر انجام دیا گیا۔ اس ڈاٹ کام کے ڈائریکٹر دیش پال دامودر پرساد سریواستو تھا۔ جرم درج ہونے کے بعد وہ فرار ہو گیا۔

پولیس نے بعد میں شبھم سارنگدھر اور شیوشنکر پرساد کو گرفتار کرلیا۔دیش پال سریواستو کو پولیس نے بہار سے گرفتار کیا تھا۔ عدالت نے انہیں 23 مئی تک پولیس کی تحویل میں دے دیا۔ تحقیقات کے دوران مالیاتی کرائم برانچ کے پولیس انسپکٹر مانک بیدرے، اسسٹنٹ پولیس انسپکٹر وی ایس۔ آرسیوار اور اس کے ساتھیوں نے ناندیڑ میں آئی ٹی آئی کے قریب وینکٹیشور موبائل شاپ کے مالک 43 سالہ سنتوش گجانن بارڈکر کو تحقیقات کے لیے طلب کیااور 21 مئی کی رات کو گرفتار کیا گیا۔آج مالیاتی کرائم برانچ پولیس کی طرف سے 22 مئی کو عدالت میں جمع کرائی گئی درخواست کے مطابق سنتوش بارڈکر کے اکاو¿نٹ سے 5 لاکھ 99 ہزار 400 روپے دو مختلف اوقات اور خطوط میں دیش پال سریواستو کے اکاونٹ میں منتقل کیے گئے۔

اس سے قبل شبھم سارنگدھر کے اکاو¿نٹ سے 29 لاکھ 81 ہزار روپے نکالے جاچکے ہیں جو سنتوش بارڈکر کی دکان میں ملازم تھے۔ سنتوش بارڈکر نے سب سے سستا ڈاٹ کام چلانے کے لیے دیش پال سریواستو کو اپنی دکان میں ایک الگ کمرہ فراہم کیا تھا۔ انہوں نے اس ڈاٹ کام کے ذریعے موبائل خریدنے والے صارفین کو بھی یقین دلایا کہ اگر کچھ غلط ہوا تو میں اس کی ذمہ دار رہوں گا۔ سنتوش کو کیس کی تفصیلی تحقیقات کے لیے پولیس حراست میں بھیج دیا گیا تھا۔ دلائل سننے کے بعد جج بڈوے نے سنتوش بارڈکر کو 25 مئی 2022 تک تین دن کے لیے پولیس کی تحویل میں دے دیا۔