ناندیڑ:7 مارچ(ورق تازہ نیوز) قندھار میں اسپیشل پوکسو جج اتل سالگر نے 14 سال 7ماہ کی لڑکی کوجنسی تشدد کا نشانہ بنانے والے نوجوان کو دو دن کے لیے پولیس کی تحویل میں دے دیا ہے۔لوہا پولس اسٹیشن حدود کی ایک 14 سالہ لڑکی کو اس کی خالہ نے پیٹ میں درد کی وجہ سے اسپتال لایاتھا اسکے بعد ڈاکٹرنے اسے علاج کے لیے ناندیڑ جانے کا مشورہ دیا۔

جب سرکاری دواخانہ میں تفتیش کی گئی تو انکشاف ہوا کہ لڑکی حاملہ ہے۔ اسکے بعدا سپتال کے ڈاکٹروںنے اسکا حمل نکال دیا۔یہ سارا معاملہ 10 نومبر2021تا3ڈسمبر2021 کے درمیان پیش آیا جب لڑکی اپنے دادا دادی کے گھر تھی۔ اس واقعہ کی شکایت گزشتہ روز پولس اسٹیشن میںدرج کروائی گئی۔پولس نے بچوں کے خلاف پروٹیکشن آف چلڈرن فرام سیکسول ابیوز ایکٹ 2012 کی دفعہ 4 اور 6 کے تحت مقدمہ درج کیا گیا ہے۔ انسپکٹر سنتوش کی رہنمائی میں تامبے، سب انسپکٹر ریکھا کالے کو تحقیقات کی ذمہ داری دی گئی ہے۔پولس نے ملزم نوجوان کوگرفتار کرلیا اور آج 7 مارچ کو اسے عدالت میں پیش کیا اور پولس تحویل کی مانگ کی۔اسے 9مارچ 2022 تک پولس حراست میں بھیج دیا گیا ہے۔