ناندیڑ :6دسمبرکے احتجاجی دھرنے کو پاپولر فرنٹ آف انڈیا کی تائید

0 17

ناندیڑ : 6 دسمبر (ورقِ تازہ نیوز ) شہر ِ ناندیڑ میں 6 دسمبر 2018 کو مسلم متحدہ محاذ کی جانب سے ایک عظیم الشان احتجاجی دھرنا ، دفتر ضلع کلکٹر کے روبرو منعقد کیا جا رہا ہے۔ جس کے ذریعے تاریخی بابری مسجد کی تعمیر ِ نو کا مطالبہ کیا جائے گا۔ مذکورہ احتجاجی دھرنے کو پاپولر فرنٹ آ ف انڈیا اپنی بھر پور تائید کا اعلان کر تی ہے۔ اس طرح کا اخباری بیان پاپولر فرنٹ کے ناندیڑ ضلع صدر احمر ندیم نے دیا ہے۔ یاد رہے کہ 6 دسمبر 1992 ءکو کار سیوکوں نے انتہائی ظالمانہ انداز سے بابری مسجد کو شہید کر دیا تھا۔ جس کے فوری بعد اُس وقت کے وزیر اعظم پی وی نرسمہا راﺅ نے بابری مسجد دوبارہ اُسی جگہ تعمیر کرنے کا وعدہ بھی کیا تھا۔ مسجد کی شہادت کے بعد ملک بھر میں فرقہ وارانہ فساد پھوٹ پڑے ۔ جن میں سیکڑوں لوگوں کو اپنی جانیں گنوانی پڑی تھی۔ دستور ِ ہند کو بالائے طاق رکھ کر بی جے پی اور سنگھ کے کارسیوکوں نے انتہائی دہشت گردانہ طریقے سے مسجد کو شہید کیا اور شہادت کے 26 برس گزر جانے کے بعد بھی وہ مجرم آزاد گھوم رہے ہیں۔ اور اس وقت کے وزیر اعظم کا کیا ہوا وعدہ بھی ابھی تک پورا نہیں کیا گیا۔ 26 سال گزر جانے کے بعد بھی ابھی تک انصاف نہیں ہوا۔ لہٰذا جن لوگوں نے غیر قانونی طریقہ سے مسجد کو شہید کیا ۔ اُنھیں جلد از جلد سزا دی جائے اور مسجد کو اُسی جگہ دوبارہ تعمیر کیا جائے۔ اسی مطالبہ کو لے کر ناندیڑ کے مسلمانوں کی متحدہ تنظیم مسلم متحدہ محاذ آنے والے 6 دسمبر کو ناندیڑ ضلع کلکٹریٹ پر ایک عظیم الشان احتجاجی دھرنا منظم کرنے جارہی ہے ۔ یاد رہے پاپو لر فرنٹ آف انڈیا پچھلے کئی برسوں سے بابری مسجد کی تعمیر ِ نو کیلئے مختلف طریقوں سے احتجاج کرتی آر ہی ہے۔ امسال پاپولر فرنٹ آف انڈیا نے مسلم متحدہ محاذ کے دھرنے کی تائید کرنے اور اپنے کارکنان کے ساتھ دھرنے میں جوش و خروش کے ساتھ شامل ہونے کا اعلان کیا ہے۔ ساتھ ہی ساتھ پاپولر فرنٹ کے ناندیڑ ضلع صدر احمر ندیم نے تمام تر مسلمانانِ ناندیڑ سے مذکورہ دھرنے میں شریک ہو کر بابری مسجد سے اپنی یگانگت کا ثبوت دینے کی اپیل کی ہے۔