ناندیڑ: یہ لڑائی کسی ایک مذہب کےلئے نہیں ہے بلکہ دستور کی دھجیاں اڑانے والی حکومت کے خلاف ہے:مفتی ایوب قاسمی

مسلمان این پی آر میں معلومات درج نہ کروائیں:سرور قاسمی
ناندیڑ:13۔جنوری۔(ورق تازہ نیوز)ناندیڑ میں آج13 جنوری کو صبح گیارہ بجے سے مرکزی حکومت کے سیاہ قانون سی اے اے اور این آر سی ‘این پی آر کی مخالفت میںکُل جماعتی تحریک ناندیڑ کے زیراہتمام ضلع کلکٹردفتر کے روبرو بے مدت دھرنے کاآغازکردیاگیا ہے۔جس میں سینکڑوں کی تعداد میں شہریان نے شرکت کی ۔

دریں اثناءآج سہ پہر تین بجے ہوٹل ایتتھی میں کُل جماعتی تحریک ناندیڑ کی جانب سے پریس کانفرنس کاانعقاد عمل میں آیا۔ اس موقع پر کُل جماعتی تحریک کے سربراہ مفتی محمدایوب قاسمی نے ناندیڑمیں جاری احتجاج کی تفصیلات بتاتے ہوئے کہا کہ سارے ملک میں سی اے اے ‘این آ رسی ‘ این پی آر کی جیسے سیاہ قانون کے خلاف سراپا احتجاج جاری ہے ۔ناندیڑ میں بھی مختلف طرزپر احتجاجی مظاہرے ہوچکے ہیں اور اب آج سے ضلع کلکٹردفتر کے روبرو نئی دہلی کے شاہین باغ کی طرز پر بے مدت دھرنے کاآغاز کردیاگیا ہے ۔

جس کو مسلمانوں کے علاوہ دلت ‘سکھ ‘ عیسائی ودیگر سیکولر طبقات کی بھرپور تائید وحمایت حاصل ہے ۔یہ لڑائی کسی ایک مذہب کےلئے نہیں ہے بلکہ دستور کی دھجیاںاڑانے والی حکومت کے خلاف ہے ۔اس طرح کے متنازعہ قوانین سے حکومت ہمارے دستور میںدراڑ دالنے کی کوشش کی جارہی ہے ۔ مولانا سرور قاسمی نے پریس کانفرنس میں ضلع کلکٹر دفترکے روبرو شروع ہوئے دھرنے کے بارے میں تفصیلی معلومات دیتے ہوئے بتایا کہ یہ دھرنا تین شفٹوں میں ہوگا جس میں چھ چھ گھنٹے تک ہر علاقہ کے لوگ شرکت کریںگے اس طرح چوبیس گھنٹے دھرنا جاری رہے گا۔دھرنے میں ثقافتی اورحب الوطنی پر مبنی پروگرام میںبھی ہوںگے ۔سرورقاسمی نے مزید کہا کہ موجودہ مرکزی حکومت اصل معاملات سے توجہ ہٹانے کیلئے سی اے اے ‘این آر سی اور این پی آر جیسے قوانین لارہی ہے ۔تمام مسائل کو بالائے طاق رکھاجارہا ہے ۔ این پی آر کے نفاذ کے بعدہونے والے سروے میں مسلمان کوکیا کرناچاہئے؟ اس سوال کے جواب میں سرور قاسمی نے کہا کہ اس مرتبہ قومی مردم شماری کے تختہ کے کالموں میں اضافہ کرکے 31کالم بنائے گئے ہیں جس میں متنازعہ سوالات درج ہیں ۔ اسلئے مسلمانوں کوچاہئے کہ وہ این پی آر میں اپنی معلومات درج نہ کروائیں۔کانفرنس میں ونچت اگھاڑی کے فاروق احمد نے سی اے اے کی مخالفت کی وجوہات کے بارے میں بتایا کہ ہمارے دستور کے مطابق کسی بھی دھرم کو چھوڑ کر کوئی بھی قانون نہیں بنایاجاسکتا ہے ۔ اسلئے سی اے اے قانون دستور کے خلاف نہ کہ کسی مذہب کے خلاف ۔ کانفرنس سے ایم آئی ایم کے سید معین نے بھی خطاب کیا ۔ مفتی ایوب قاسمی نے احتجاج کے لائحہ عمل کے بارے میں بتاتے ہوئے کہاکہ دھرنا آندولن کے بعد جیل بھرو ‘ریل روکو اور چکاجام جیسے احتجاج بھی کئے جائیں گے ۔جب تک حکومت سی اے اے قانون واپس نہیں لے گی اُس وقت تک دھرنا آندولن جاری رہے گا۔کانفرنس کے ابتداء میں ناصر خطیب نے احتجاج کے بارے میں اہم معلومات دیں ۔ ایڈوکیٹ محمدشاہد نے ذرائع ابلاغ کے نمائندوں کاخیر مقدم کیااور آخر میں شمیم عبداللہ نے اظہار تشکر کیا ۔پریس کانفرنس میں مولانا آصف ندوی ‘ مولاناسرور قاسمی ‘ مولانا عبدالزاق صاحب رشیدی ‘مفتی خالدشاکر قاسمی ‘ محمد یوسف محمدی ‘مسعوداحمدخاں ‘فیروز لالہ ‘ سید معین ‘ فاروق احمد ‘ ڈاکٹر مجاہد خان موجود تھے۔
دیہی پولس اسٹیشن کاملازم رشوت خوری کے الزام میں پھنس گیا
ناندیڑ:13۔جنوری۔(ورق تازہ نیوز)ناندیڑ دیہی پولس اسٹیشن کا ملازم بارہ ہزار روپے کی رشوت کامطالبہ کرکے چار ہزار کی رشوت قبول کرنے کی کوشش کے معاملے میں پھنس گیا ہے ۔12جنوری کو ایک گٹی کریشر مالک نے اینٹی کرپشن بیورو میں شکایت در ج کروائی کہ انکے کارخانہ سے گٹی کوچار ٹپر کے ذریعہ منتقل کیاجاتا ہے لیکن دیہی پولس اسٹیشن کے ملازم نامدیو ناگوراو ڈھگے نے فی ٹپر تین ہزار اس طر ح بارہ ہزار روپے کی رشوت کامطالبہ کیاتھا ۔اے سی بی نے معاملے کی تفتیش کی اور اس بات کاانکشاف ہوا کہ ڈھگے نے چار ہزار روپے کی رشوت قبول کرنے کاطئے کیا ہے ۔ دریںا ثناءڈھگے کو معلوم ہوگیا کہ اُن پرکوئی مصیبت آنے والی ہے اسلئے 12جنوری کو چار ہزار روپے کی رشوت قبول نہیں کی اورفرار ہوگیا۔اس معاملے میں دیہی پولس اسٹیشن میں ہی اے سی بی کی شکایت پرڈھگے کے خلاف مقدمہ درج کیاگیا ہے ۔پی آئی شیش راو نیتن نورے مزید تفتیش کررہے ہیں۔

HAJJ ASIAN

WARAQU-E-TAZA ONLINE

I am Editor of Urdu Daily Waraqu-E-Taza Nanded Maharashtra Having Experience of more than 20 years in journalism and news reporting. You can contact me via e-mail waraquetazadaily@yahoo.co.in or use facebook button to follow me