ناندیڑ میں 24 مریضوں کی موت کے بعد سرکاری اسپتال کا بیان آیا سامنے

▪️ہسپتال میں ضروری ادویات کا ذخیرہ دستیاب ہے۔
▪️ ڈاکٹروں کی پوری ٹیم مریضوں کی خدمت کے لیے تیار ہے۔
▪️ داخلے کے وقت مریضوں کی حالت تشویشناک تھی اسلئے زیادہ اموات ہوئیں۔

ناندیڑ (ورق تازہ نیوز ):- ناندیڑ کے ڈاکٹر شنکراؤ چوان گورنمنٹ میڈیکل کالج اور اسپتال میں 30 ستمبر سے یکم اکتوبر 2023 تک 24 مریضوں کی موت ہوئی۔

جن میں 12 بالغ مریض (5 مرد، 7 خواتین) اور 12 نوزائیدہ مریض تھے۔بالغ مریضوں میں سے 4 دل کی بیماری، 1 زہر، 1 پیٹ کی بیماری، 2 گردوں کی بیماری، 1 زچگی کی پیچیدگی، 3 حادثات اور دیگر امراض اور 4 بچوں کو پرائیویٹ ریفر کیا گیا۔

ضروری ادویات کا سٹاک گورنمنٹ میڈیکل کالجوں اور ہسپتالوں میں دستیاب ہے۔ ڈسٹرکٹ ہسپتال انتظامیہ کی جانب سے بتایا گیا ہے کہ رواں مالی سال کے لیے ضلعی منصوبہ بندی کے ذریعے 12 کروڑ کے فنڈز دیے گئے ہیں اور مزید 4 کروڑ کی منظوری دی گئی ہے

۔پچھلے دو دنوں میں زیادہ نازک مریض خصوصاً ٹرمینل مریض ضلع اور باہر سے آئے ہیں۔ جنھیں ڈاکٹر اور عملہ دیکھ رہا ہے۔ یہ گورنمنٹ میڈیکل کالج اور ہسپتال کئی سالوں سے اچھی خدمات فراہم کر رہا ہے۔ دیگر داخل مریضوں کو ضروری ادویات دی جا رہی ہیں،

اس طرح کا بیان ڈاکٹر شنکراؤ چوان گورنمنٹ میڈیکل کالج اینڈ ہاسپٹل کے میڈیکل سپرنٹنڈنٹ وشنو پوری نے ایک پریس ریلیز کے ذریعے جاری کیا۔