ناندیڑ میں کورونا لاک ڈاؤن کے دوران لکڑی کی بیریکیڈنگ کا ڈھائی کروڑ کا بل؟

836

ناندیڑ، 17 اگست: کورونا کے دور میں شہر کی سڑکوں اور علاقے کو بھی محدود کرنے کے لیے لکڑی کی بیریکیڈنگ کی گئی تھی۔ مزید برآں نانا نانی پارک میں معائنہ کے لیے ٹینٹ شیڈ بھی لگایا گیا۔ یہ کام ناندیڑ شہر کے ایک پرائیویٹ کنٹریکٹر کو سونپا گیا تھا۔ چونکا دینے والی معلومات سامنے آئی ہیں کہ اس ٹھیکیدار نے ناندیڑ میونسپل کارپوریشن کو 2 کروڑ 44 لاکھ روپے کا بل جمع کرایا ہے۔

لکڑی کی بیریکیڈنگ کا تقریباً ڈھائی کروڑ روپے کا بل پیش ہوتے ہی اس پر تنقید ہونے لگی ہے۔ خاص بات یہ ہے کہ میونسپل کارپوریشن کے جنرل اجلاس میں مخالفین کو کوئی بحث کی اجازت دیے بغیر پورا ایجنڈا پاس کیا گیا۔

ایوان میں ایجنڈے پر بحث کیے بغیر ہی ایجنڈا جلد بازی میں پاس ہونے پر اپوزیشن جارحانہ ہو گئی۔ آہنی رولنگ بیریکیڈس ڈھائی کروڑ روپے میں خریدے جا سکتے تھے۔ مزید یہ کہ اگر یہ رکاوٹیں اسکریپ کے طور پر واپس فروخت کی جاتیں تو میونسپل کارپوریشن کو آدھی رقم واپس آ جاتی، مخالفین نے اعتراضات اٹھائے ہیں۔

محکمہ تعمیرات عامہ معیار کے مطابق گتہ دار کو بل تیار کرتا ہے اور گتہ دار بل بلدیہ کو پیش کرتا ہے۔ لیکن اس کی جرح کیے بغیر انتظامیہ اور حکمراں جماعت نے بل کو منظور کر لیا۔ بی جے پی نے اس میں بدعنوانی کا الزام لگایا ہے۔ بی جے پی نے الزام لگایا کہ اس بل میں انتظامیہ اور حکمراں کانگریس کی ملی بھگت ہے۔

اپوزیشن کی طرف سے مخالفت ہونے پر حکمران جماعت اس معاملے میں کوئی جواب نہیں دے رہی ہے۔ افسران اور اہلکار بھی اس پر بات کرنے کو تیار نہیں۔ میونسپل کارپوریشن میں کانگریس کے پاس واضح اکثریت ہے۔ 82 میں سے 72 کارپوریٹر کانگریس سے تعلق رکھتے ہیں۔