ناندیڑ: 12جون ( ورقِ تازہ نیوز)ہرش نگر میں تین سارقین نے ایک طالب علم کو مارپیٹ کرتے ہوئے اس کے پاس سے ہیڈفون اور نقد رقم چھین کر فرار ہوگئے تھے۔ ان تین سارقین کو ایئرپورٹ پولیس نے فوری طوری پر حراست میں لینے کے بعد ان کے پاس سے مسروقہ مال برآمد کیا۔ بعد ازاں پولیس نے انہیں عدالت میں پیش کیا۔ عدالت نے ان تین سارقین کو ایک دن کی پولیس تحویل میں روانہ کرنے کا حکم دیا۔ تفصیلات کے مطابق 11 جون کو مندار مانے نامی نوجوان شام نگر دواخانے کے قریب ہرش نگر چوک میں ٹھہرا ہوگیا۔ اس وقت تین سارقین وہاں آئے اور انہوں نے مندار اجئے مانے کے کان پر لگا ہوا موبائل ایئرفون اور نقد 900 روپئے جبراً چھین لیے۔ جب اس کی اطلاع دتا پاٹل کھراٹے کو ملی تب وہ وہاں پہنچے، تاہم سارقین اپنی موٹر سائیکل چھوڑ کر فرار ہوگئے۔ کچھ دیر بعد سارقین کا ایک دوست چھوڑی ہوئی موٹر سائیکل لے جانے آیا تب کھراٹے پاٹل نے اس سے استفسار کیا ،تو وہ بھی فرار ہوگیا۔ اس معاملہ میں ایئرپورٹ پولیس نے جرم نمبر 199/2022 تعزیرات ہند کی دفعہ 392,34 کے تحت درج کیا ہے۔

آج پولیس نے انہیں عدالت میں پیش کیا۔ عدالت نے ان تین سارقین(سورج کوکرے، شبھم کوسرے، اشویس لونے، ساکن گنگاچال) کو ایک دن کی پولیس تحویل میں روانہ کرنے کا حکم دیا۔واضح رہے کہ ناندیڑ ضلع میں سرقہ بالجبر اور چوری و لوٹ مار کے واقعات میں کافی اضافہ ہوگیا ہے۔ شہریان کو سارقین سے محتاط رہنے اور اپنی اور اپنے سازوسامان کے حفاظت کے لیے مناسب اقدامات کی ضرورت ہے۔ قبل ازیں شہر کے ہرش نگر کی سمت جانے والی ٹی پوائنٹ پر ایک جبری چوری کی واردات پیش آئی، تاہم سارقین اپنی موٹر سائیکل چھوڑ کر فرار ہونے میں کامیاب ہوگئے۔ مکھیڑ بس اسٹیشن کے منیجر کے گھر میں بھی حالیہ دنوں چوری ہوئی۔ قدیم مونڈھا علاقہ میں ایک کرانہ دُکان میں سرقہ ہوا۔ وزیر آباد، بھاگیہ نگر، حدگاﺅں پولیس اسٹیشنوں کے حدود میں تین ٹووہیلر گاڑیاں چوری ہوئیں۔ مذکورہ چوری کی وارداتوں میں ایک لاکھ 91 ہزار 900 روپئے کی مالیت چوروں نے سرقہ کی ہے۔ ہرش نگرکا ساکن طالب علم مندار اجئے مانے 10 جون کی شب ساڑھے نو بجے ہرش نگر کارنر پر ٹھہرا ہوا تھا، اس وقت تین سارقین وہاں آئے اور انہوں نے مندار اجئے مانے کے کان پر لگا ہوا موبائل ایئرفون اور نقد 900 روپئے جبراً چھین لیے۔ جب اس کی اطلاع دتا پاٹل کھراٹے کو ملی تب وہ وہاں پہنچے، تاہم سارقین اپنی موٹر سائیکل چھوڑ کر فرار ہوگئے۔ کچھ دیر بعد سارقین کا ایک دوست چھوڑی ہوئی موٹر سائیکل لے جانے آیا تب کھراٹے پاٹل نے اس سے استفسار کیا ،تو وہ بھی فرار ہوگیا۔ اس معاملہ میں ایئرپورٹ پولیس نے جرم نمبر 199/2022 تعزیرات ہند کی دفعہ 392,34 کے تحت درج کیا۔ مزید تحقیقات سب انسپکٹر بُرکُلے کررہے ہیں۔

اسی طرح دتاتریے گنپت راﺅ کاملے کی دی گئی شکایت پر بس اسٹیشن کے حدود میں ڈپو منیجر کی رہائش گاہ ہے،11 جون کی صبح 9 بجے ان کی رہائش گاہ میں بھی سارقین نے قفل شکنی کرتے ہوئے اندر داخل ہوئے اور 40 ہزار روپئے مالیتی ایلیومنیم کی کھڑکیاں چوری کرلیں۔ مکھیڑ پولیس نے مقدمہ درج کیا ہے۔ مزید تحقیقات پولیس آفیسر راٹھوڑ کررہے ہیں۔رُپا جتیندر مکتیدار کی دی گئی شکایت کے مطابق 11 جون 2022ءکی سہ پہر 2:25 بجے وہ قدیم مونڈھا میں واقع گنگاسہائے کرانہ دُکان میں آئے تھے۔ انہوں نے اپنے ساتھ 71 ہزار روپئے نقد اور 22 ہزار روپئے کا بیرئیر چیک اپنے پاس موجود تھیلی میں رکھا تھا۔ نامعلوم سارقین نے ان کی تھیلی چرالی۔ اس معاملہ میں اتوارہ پولیس اسٹیشن میں مقدمہ درج کیا گیا۔ مزید تحقیقات سب انسپکٹر منیر کررہے ہیں۔اجئے ماروتی نرواڑے کی 40 ہزار روپئے مالیتی ٹووہیلر گاڑی نمبر MH26AX-9382 گزشتہ دنوں پوسٹ آفس ناندیڑ کے پاس سے چوری ہوگئی۔ وزیر آباد پولیس نے مقدمہ درج کیا ہے۔ مزید تحقیقات پولیس آفیسر شنگے کررہے ہیں۔ لکشمی بائی سدھاکر وڑارے کی ٹووہیلر نمبر MH26AJ-0810 کو سارقین نے 8 جون کی شب چرالیا۔ حدگاﺅں پویس نے مقدمہ درج کیا ہے۔ پولیس آفیسر ہمبرڈے مزید تحقیقات کررہے ہیں۔ مذکورہ ٹووہیلر کی قیمت 30 ہزار روپئے بتائی گئی ہے۔ اسی طرح وکاس شنکر کبڑے کی 10 ہزار روپئے مالیتی ٹووہیلر نمبر MH26-AF-9357 بھی گزشتہ دنوں چوری ہوگئی۔ بھاگیہ نگر پولیس نے مقدمہ درج کیا ہے۔ مزید تحقیقات پولیس آفیسر میلواڑ کررہے ہیں۔ شہر ناندیڑ میں سرقہ بالجبر اور چوری و لوٹ مار کی وارداتوں میں کافی اضافہ ہوا ہے۔ ان وارداتوں کو دیکھ کر ایسا لگ رہا ہے جیسے سارقین کو پولیس کا کوئی ڈر و خوف نہیں رہا۔ عوام کی جانب سے بھی پولیس کی کارکردگی پر سوالیہ نشان لگائے جارہے ہیں۔