ناندیڑ۔18نومبر (نامہ نگار)ناندیڑ کی پر امن فضاء کو چند شر پسند عناصر کی جانب سے تشدد برپا کرکے دو سماج کے درمیان میں فساد برپا کرنے کی منظم سازیشیں رچی گئی تھی۔ ان حالات میں دونوں بھی فرقوں سے تعلق رکھنے والے افراد کو چاہے کہ وہ فسادیوں کے بہکائویں میں نہ آتے ہوئے شہر و ضلع کی پر امن فضاء کو برقرار رکھنے کی کوشش کریں۔اس طرح کی بات شہر کے شیواجی نگر پولیس اسٹیشن کے پی آئی بھگوان دگڑے نے کہی۔ واضح ہوکہ شہر کے معزز علماء اکرام ، حفاظ، ذی اثر شخصیات کے علاوہ سماجی خدمت گار نے شہر کے شیواجی نگر پولیس اسٹیشن میں پہنچ کر وہاں کے پی آئی سے ملاقات کرتے ہوئے شہر میں امن و امان کی برقراری سے متعلق اہم گفت و شنید کی۔

اس موقع پر مولانا ایوب قاسمی نے شیواجی نگر پولیس اسٹیشن کے پی آئی سے مخاطب ہوکر کہا کہ ناندیڑ میں جلسہ کے بعد ہوئے پرتشدد سنگ باری کرنے والے قصور وار افراد کے خلاف میں تو پولیس محکمہ سخت کاروائی کریں۔ لیکن بے جا مسلم نوجوانوں کی گرفتاریوں پر روک لگائی جائیں۔مولانا موصوف نے مزید کہا کہ کسی بھی مذہب میں کسی بھی فرد کو پرتشدد کرنے کی کبھی بھی کوئی مذہب اجازت نہیں دیتا ۔ جو افراد اس طرح کی پرتشدد وارداتوں کو انجام دیتے ہیں اُن کا دماغی توازن بگڑا ہوا ہوتا ہے۔شہر کے شیواجی نگر پولیس اسٹیشن میں امن کمیٹی کی اس میٹنگ میں مولانا ایوب قاسمی نے قصور وار افراد کے خلاف میں سخت قانونی کاروائی کئے جانے کا مطالبہ کیا اور ساتھ ہی انہوںنے پولیس محکمہ سے اپیل کی کہ وہ بے جا مسلم نوجوانوں کی گرفتاریوں پر روک لگائے جانے کا مطالبہ کیا۔

اسی طرح جن بے قصور افراد کی گرفتاریاں عمل میں آئی ہے ۔ اُن کی جلد ازجلد رہائی عمل میں لائے جانے کا مطالبہ بھی کیا جارہا ہے۔واضح ہوکہ تریپورہ میں رونماء ہوئے فسادات کی مذمت سے متعلق ناندیڑ میں بھی بند کی اپیل رضاء اکیڈمی و تحفظ ناموس رسالت بورڈ ناندیڑ کی جانب سے 12نومبر2021؁ء کے روز مسلمانوں نے بھی صد فیصد اپنے تجارتی مراکز ، دُکانیں و تعلیمی اداروں کوبند رکھا تھا۔ چند شر پسند عناصر کی جانب سے پولیس پر سنگ باری کی گئی۔ جس کے سبب پولیس نے آنسو گیس کا استعمال کرتے ہوئے شر پسند عناصر کو بھگانے کا کام کیا۔ اس پر تشدد واردات میں کئی پولیس اہلکار زخمی ہوئے تھے۔ جس کے سب پویس نے سنگ باری کرنے والے افراد کی دھر پکڑ شروع کی۔ پولیس کی گرفتاریوں پر کئی ذی اثر شخصیات و سماجی خدمت گار نے اعتراض جتاتے ہوئے کہا کہ وہ قصور وار افراد کے خلاف میں تو ضرور گرفتاریاں کریں لیکن بے قصور نوجوانوں کو ہر گز ہراساں و گرفتار نہ کریں۔ اس موقع پر شیواجی نگر پولیس اسٹیشن کے پی آئی بھگوان دگڑے نے امن کمیٹی میٹنگ میں مزید کہا کہ افواہوں پر دھیان نہ دیتے ہوئے شہر و اطراف میں امن و امان کی برقراری کیلئے سب کی ذمہ داری ہے کہ وہ آگے آئیں ۔ پی آئی نے مزید کہا کہ شہر و ضلع میں فساد برپا کرنے والے افراد کا کوئی مذہب نہیں ہوتا بلکہ وہ پر امن فضاء کو خراب کرنے کے سازشش میں ملوث رہتے ہیں۔ پی آئی نے مزید کہا کہ معاشرے میں پر امن فضا ء کی برقراری کیلئے تمام علماء، حفاظء سماجی خدمت گار، و ذی اثر شخصیات کو امن کمیٹی کے اجلاس کے ذریعہ سے شہر میں امن و امان کیلئے کوششیں کرنا ضروری ہے۔شہر کے شیواجی نگر پولیس اسٹیشن میں منعقدہ اس امن کمیٹی اجلاس میں مولانا محمد ایوب قاسمی ، مولانا سید علیم احمد ،مولانا عظیم احمد ، شیخ خواجہ، شیخ ریاض ، خواجہ بھائی (صحافی)، سب انسپکٹر اُما کانت ، پولیس اہلکار ملند سون کامبڑے، ڈی ایس بی کے سب انسپکٹر پرلاد ہیبت کر ، جمدار احمد پٹھان، و دیگر کئی ذمہ داران اس امن کمیٹی میٹنگ میں شریک تھے۔

ورق تازہ نیوز اب ٹیلی گرام پر بھی دستیاب ہے۔ ہمارے چینل کو جوائن کرنے کے لئے یہاں کلک کریں  https://t.me/waraquetazaonlineاور تازہ ترین خبروں سے اپ ڈیٹ رہیں۔