ناندیڑ: 21.جنوری۔ (ورق تازہ نیوز) ناندیڑ کے شانتی نگر دھماکہ اور ڈیٹونیٹر ظبطی معاملے میں دوسرا ملزم پکڑا گیاہے۔ فرسٹ کلاس مجسٹریٹ پروین کلکرنی نے اسے 22 جنوری 2022 تک دو دن کے لیے پولیس کی تحویل میں دے دیا ہے۔

13 جنوری کو درج مقدمہ نمبر 13/2022 کے مطابق، 8 جنوری کو دیپک ڈگمبر ڈھونڈگے کے گھر واقع شانتی نگر میں دھماکہ ہوا تھا۔ پولیس نے دیپک ڈھونڈگے کو گرفتار کرلیا۔ انہوں نے کہا کہ ان کے رشتہ دار کیشو شیواجی پوار (41) ساکن پربھنی نے گھر میں ڈیٹونیٹر لایا تھا۔

پولیس معاملے کی تحقیقات کر رہی ہے۔ڈپٹی انسپکٹر جنرل آف پولیس نثار تمبولی، پولیس سپرنٹنڈنٹ پرمود کمار شیوالے، ایڈیشنل سپرنٹنڈنٹ آف پولیس نیلیش مورے، ڈپٹی سپرنٹنڈنٹ آف پولیس ڈاکٹر سدھیشور بھورے اور پی آئی صاحبراو نروادے اس معاملے پر گہری نظر رکھے ہوئے تھے۔

اتوارہ سے ایک پولیس ٹیم نے آج صبح کیشو شیواجی پوار کو گرفتار کیا۔ اس کے بعد دوپہر میں شیخ اسد، پولس افسران راج گھُلے، مانیکر، کیندرا، سنگھارتنا گائیکواڑ اور دیگر نے ڈیٹونیٹر کیس کے ملزم کیشو شیواجی پوار کو عدالت میں پیش کیا۔

سرکاری وکیل ایڈو گریش مورے نے کہا کہ اس کیس کی وجہ سے ناندیڑ شہر میں خوف کا ماحول پیدا ہوا ہے، اس کیس کی مکمل تحقیقات کے بعد واضح ہو جائے گا۔ اس کے لیے ملزم کو پولیس کسٹڈی دی جائے۔۔ دلائل سننے کے بعد جج پروین کلکرنی نے کیشو شیواجی پوار کو دو دن کی پولیس حراست میں بھیج دیا۔