ناندیڑ سمیت ریاست میں لمپی بیماری سے متاثر چارہزارسے زائد مویشی ر وبہ صحت

495

ممبئی: 21ستمبر۔ (ورق تازہ نیوز)ریاست میں جلگاو¿ں، احمد نگر، دھولے، اکولا، پونے، لاتور، اورنگ آباد، بیڑ، ستارہ، بلڈانہ، امراوتی، عثمان آباد، کولہاپور، سانگلی، ایوت محل، پربھنی، سولاپور، واشیم، ناسک، جالنہ، پالگھر، تھانے ‘ناندیڑ، ناگپور، چندرپور، ہنگولی، رائے گڑھ اور نندربار جیسے 28 اضلاع کے کل 1 ہزار 406 دیہاتوں میں، صرف 13 ہزار 425 جانور ہی لمپی سے متاثر ہوئے ہیں۔

متاثرہ دیہات میں 13 ہزار 425 متاثرہ جانوروں میں سے 4 ہزار 600 جانور علاج سے صحت یاب ہو چکے ہیں۔ مویشی پالن کے کمشنر سچندرا پرتاپ سنگھ نے بتایا کہ باقی متاثرہ جانوروں کا علاج کیا جا رہا ہے۔ ریاست کے مختلف اضلاع میں 73.53 لاکھ ویکسین کی مقدار دستیاب کرائی گئی ہے۔ سنگھ نے کہا کہ اس میں سے متاثرہ علاقے کے 5 کلومیٹر کے دائرے میں 1 ہزار 406 دیہاتوں میں 23.25 لاکھ مویشیوں کو مفت ٹیکہ لگایا گیا ہے اور مزید ویکسینیشن گوشالوں اور بڑے گاﺅں یا ایسی جگہوں پر جاری ہے جہاں بڑی تعداد میں مویشی موجود ہیں۔

سرکاری ویٹرنری کے ساتھ ساتھ پرائیویٹ ویٹرنری پیشہ ور افراد کو مہاراشٹر یونیورسٹی آف اینیمل اینڈ فشریز سائنسز کے ذریعہ دیے گئے پروٹوکول کے مطابق علاج کرنا چاہیے۔ حکومت کی طرف سے مفت ادویات اور ویکسینیشن کا منصوبہ بنایا گیا ہے۔ اگر اس سلسلے میں کوئی شکایت ملی تو متعلقہ کے خلاف سخت کارروائی کی جائے گی۔ مویشی پالنے والے محکمہ کے ٹول فری نمبر پر شکایت کر سکتے ہیں۔ 1800-2330-418 یا ٹول فری نمبراور1962 پر رجسٹریشن کرواسکتے ہیں۔یہ بیماری مکھیاں، مچھر، کاکروچ وغیرہ سے ہوتی ہے۔ چونکہ یہ کیڑوں کے ذریعے پھیلتا ہے، اس لیے سنگھ نے یہ بھی مشورہ دیا کہ ہر گاو¿ں کی پنچایت کو کیڑے مار ادویات کا چھڑکاو¿ کرنا چاہیے۔