اورنگ آباد:21اکتوبر(ورق تازہ نیوز) ناندیڑ-منماڑ ریلوے لائن کی برقی کاری 2023 تک مکمل ہو جائے گی۔ جنوبی وسطی ریلوے کے ناندیڈ سیکشن کو وسطی ریلوے سے جوڑنے کا مطالبہ ہے۔ مزید برآں ، اس ریلوے کودوہری لائن کرنے کا مطالبہ پرانا ہے اور میں اسی کام پر عمل پیرا ہوں ۔ ان ِ خیالات کا اظہار مرکزی وزیر مملکت ریلوے راو¿ صاحب دانوے نے بدھ کو ریلوے کی ایک میٹنگ میں کیا۔

انہوں نے یہ بھی واضح کیا کہ مراٹھواڑہ کے اراکین پارلیمنٹ اور ریلوے حکام کی میٹنگ دہلی میں تمام زیر التوا مطالبات کے لیے پارلیمنٹ سیشن کے دوران منعقد کی جائے گی۔جنوبی سنٹرل ریلوے کے ناندیڑ ڈویژ ن کی میٹنگ اورنگ آباد میں پہلی بار منعقد ہوئی۔ اس موقع پر وزیر مملکت دانوے نے کہا کہ ریاستی حکومت کو غیر منافع بخش ریلوے اور منصوبوں کی تکمیل کے لیے 50 فیصد حصہ دینا چاہیے۔ اس کے لیے سبھی وزیر اعلیٰ سے ملاقات کریں گے۔

میٹنگ میں موجود ارکان پارلیمنٹ کے اپنے مطالبات پیش کرنے کے بعد راو¿ صاحب دانوے نے کہا کہ اس سے قبل بطور رکن پارلیمنٹ وہ میٹنگ میں مسائل اٹھا رہے تھے۔ آج میں بطور وزیر آیا ہوں۔ مراٹھواڑہ میں ریلوے کی ترقی کے لیے کوششیں کی جائیں گی۔ ریاستی حکومت کے پاس کچھ مسائل زیر التوا ہیں۔ جن میںریاست میںنئی ریلوے اور انڈربریج کی تعمیر شامل ہے۔ ایس سی آر کے دائرہ اختیار میں مہاراشٹر کے لیے 4 ہزار 264 کروڑمنظورکئے گئے ہیں۔ اس کام میں 263 کلومیٹر۔ ڈبل لائن ، 42 کلومیٹر۔ تیسری لائن اور 930 کلومیٹر برقی لائن شامل ہے ۔ 81 کلومیٹر طویل مد کھیڑ۔پربھنی ریلوے لائن کودوہرا کرنے کا کام مکمل ہوگیاہے۔ دانوے نے کہا کہ اکولا-اکوٹ کے درمیان 43 کلومیٹرگیج کی تبدیلی کا کام بھی مکمل ہو چکا ہے۔

ورق تازہ نیوز اب ٹیلی گرام پر بھی دستیاب ہے۔ ہمارے چینل کو جوائن کرنے کے لئے یہاں کلک کریں  https://t.me/waraquetazaonlineاور تازہ ترین خبروں سے اپ ڈیٹ رہیں۔