• 425
    Shares

ناندیڑ:29 ستمبر (ورق تازہ نیوز)ناندیڑشہر وضلع میں سیلاب کی صورتحال آج مزید خراب ہوئی ہے۔ کل کے بہ نسبت آج 29ستمبر کو گوداوری ندی کی سطح آب میں کافی اضافہ ہوا ہے اور اب یہ خطرے کے نشان تک پہنچ گئی جس کی وجہہ سے اسکاپانی شہر کے بیشتر نشیبی علاقوں میں داخل ہوگیاہے۔ آج شام تک موصولہ تازہ ترین اطلاع کے مطابق شہر کے جن علاقوں میں ندی کاپانی ابھی تک داخل نہیں ہوسکاتھاآج وہاں بھی پانی داخل ہوگیا ہے اورمکانات کوخالی کروایاگیا ہے۔

اورنگ آباد کے جیکواڑی ڈیم سے 10ہزار کیوزیکس پانی آج صبح چھوڑاگیا ہے جو گوداوری ندی میں پہنچ رہا ہے جس سے ندی کی سطح آب میں اور اضافہ ہوگا اور ندی خطرے کے نشان سے اوپر بہہ سکتی ہے۔گوداوری ندی میں تاحال دودھنا پروجیکٹ ‘ ماجل گاوں ڈیم ‘ دگرس ڈیم اوریلدری وسدیشور ڈیمس سے پانی چھوڑاجارہاہے ۔جو بڑی تیزی سے ندی میں پہنچ رہا ہے۔وشنوپوری ڈیم کے پندرہ دروازے آج دوپہر تک کھولے گئے ہیں اورمزیدتین دروازے بھی کھولے جاسکتے ہیں اسلئے حالات مزید ابتر ہوسکتے ہیں ۔

تیلنگانہ کا پوچم پاٹ ڈیم بھی 100فیصد لبریز ہوگیا ہے اسلئے اس ڈیم میں گوداوری ندی کاپانی نہیں پہنچ رہا ہے ۔جس کی وجہہ سے ناندیڑ میں سیلاب کی صورتحال اور خراب ہورہی ہے۔وشنوپوری پروجیکٹ کے 15 دروازوں سے 2 لاکھ 47 ہزار 375 کیوسیس پانی کا اخراج شروع ہو چکا ہے۔عوام مزید معلومات کیلئے محکمہ آبی وسائل کے ٹیلی فون نمبر 02462-263870 سے حاصل کی جا سکتی ہیں۔شہر کے جن نشیبی علاقوںمیں سیلاب کاپانی داخل ہواہے ان میں بلال نگر اورا س سے علاقے ‘ چوپالہ مرگھاٹ‘ناوگھاٹ‘ قلعہ سے متصل سراءمسجد کا علاقہ‘ کالا پُل گاڑی پورہ ‘گووردھن گھاٹ کاعلاقہ ‘ کھڑکپورہ ‘دلہے شاہ رحمن نگر ‘ سیلاب نگر ‘سمیراباغ اوراس سے متصل کچھ علاقے شامل ہیں۔ان علاقوں کے متاثرین کو عارضی رہائش گاہوں میں منتقل کیاگیا ہے ۔

ورق تازہ نیوز اب ٹیلی گرام پر بھی دستیاب ہے۔ ہمارے چینل کو جوائن کرنے کے لئے یہاں کلک کریں  https://t.me/waraquetazaonlineاور تازہ ترین خبروں سے اپ ڈیٹ رہیں۔