ناندیڑ:9ڈسمبر۔(ورق تازہ نیوز)فرسٹ کلاس مجسٹریٹ پروین کلکرنی نے 9 دسمبر کوگاڑی پورہ علاقے میں رونماہوئے فرقہ وارانہ تصادم معاملے میں گرفتار 15 ملزمین کو دو دن کے لیے پولیس کی تحویل میں دے دیا۔

7 دسمبر کی رات گاڑی پورہ، چھوٹی درگاہ علاقے میں فرقہ وارانہ تصادم ہوا۔ اتوارہ پولیس نے اس معاملے میں جرم نمبر297/2021 درج کیا ہے۔ سب انسپکٹر آف پولیس شیخ اسدمعاملے کی تفتیش کررہے ہیں۔

آج، 9 دسمبر کو، شیخ اسد اور ان کے ساتھیوں نے، بشمول پولس افسران چندرکانت مانڈوکر، بالاجی پوار، کیندرا اور کئی آر سی پی جوانوں نے 13 گرفتار افراد کو عدالت میں پیش کیا۔

گرفتار افراد میں سید عتیق سید نفیس (30سال)، سید ذاکر سید یوسف (25سال)، فیروز خان صادق خان (31سال)، مصطفی خان عرف سلمان خان صادق خان (18سال)، سرفراز خان صادق خان (20سال)، محمد ناصر حسین (20سال‘محمد ظفر حسین ، محمد عدی حسین محمد مختار حسین (19سال)، شاہد احمد نذیر احمد (22سال)، محمد انعام محمد شاکر (31سال)، محمد افضل محمد انور (31سال)، شیخ امام حسین صاحب (31سال)، سید علید سید مجید (19سال)، سید مجید سید امام الدین (35سال) کو عدالت میں پیش کیاگیا۔

پولس نے دلائل پیش کی جس کے بعد جج نے انھیں دو دن کیلئے پولیس حراست میں بھیج دیا ہے۔ اس کے علاوہ پولس نے اسی معاملے میں کیس نمبر 298 کے تحت سنتوش ستیش راو¿ ٹاکنکار‘اور وشال راجکمار اگروال کو اسی عدالت میں گرفتار کرنے کے بعدپیش کیاگیا۔جج نے انھیں بھی دو دن کیلیے پولس کسٹڈی میں بھیج دیا ہے۔ ا س طرح آج تمام پندرہ ملزمین کو دو دن یعنی 11ڈسمبر تک پولس کسٹڈی میں رکھنے کاحکم دیا گیا ہے۔

ورق تازہ نیوز اب ٹیلی گرام پر بھی دستیاب ہے۔ ہمارے چینل کو جوائن کرنے کے لئے یہاں کلک کریں  https://t.me/waraquetazaonlineاور تازہ ترین خبروں سے اپ ڈیٹ رہیں۔