ناندیڑیکماپریل(ورق تازہ نیوز)پولس پرحملہ کے معاملے میں گرفتار 18 ملزمین کو چیف جوڈیشیل مجسٹریٹ ستیش ہیواڑے نے 12دن کی پولس کسٹڈی میںبھیج دیا ہے ۔گرفتار19 ملزمین میںسے ایک نابالغ ہے اسلئے ریمانڈ ہوم روانہ کردیاگیا ۔29مارچ کو ہلہ محلہ جلوس کے دوران کچھ نوجوانوںنے پولس پرحملہ کیاتھا جس میں ایڈیشنل ایس پی وکرانت گائیکواڑ‘ پولس عملدار دنیش پانڈے ‘ اور اجئے یادو کے علاوہ دیگر پولس ملازمین زخمی ہوئے تھے وکرانت گائیکواڑ کے ہاتھ میںفریکچر آیا ہے ۔دنیش پانڈے کی پیٹھ میںتلوار سے زخم آئے ہیں۔اجئے یادو کاسرپھوٹ گیا ہے ۔دیگر پولس ملازمین کوبھی چوٹیں آئی ہیں ۔پولس کی آٹھ گاڑیو ں کی توڑ پھوڑ کی گئی تھی اس معاملے میں وزیر آباد پولس اسٹیشن میں جرم نمبر 113,114اور115درج کیاگیا ہے جس میں ایک مقدمہ سنت بابا کے خادم کو مارپیٹ کرنے پربھی درج کیاگیا۔

تمام درج جرائم کے معاملے میں پولس نے ہرنیک سنگھ مناسنگھ توپ چی ساکن چکھلواڑی “امرجیت سنگھ عرف راجو بسونت سنگھ مہاجن ساکن گرودوارہ گیٹ نمبر 4 ‘کاشمیر سنگھ پریم سنگھ ہانڈی ‘منندرسنگھ لانگری ‘سکھاسنگھ بھگوان سنگھ باوری ‘ا ندر سنگھ عرف ببلو لوچن سنگھ‘جسونت سنگھ عرف چننو کشن ‘وکرم جیت سنگھ ہربھجن سنگھ ‘پرمجیت سنگھ سردارسنگھ سردار‘اجیت پال سنگھ پریت پال سنگھ گرہنتھی‘ ہربھجن سنگھ پہریدار‘بلونت سنگھ سلطان سنگھ ٹاک‘ہرپریت سنگھ عرف کالو‘رنجیت سنگھ‘سدرشن سنگھ شاہو‘ جگجیت سنگھ عرف راجا گھڑی ساز ]‘للکاراسنگھ پونم سنگھ ‘راناسنگھ ٹاک کوگرفتار کیا ہے ۔ان تمام ملزمین کو پی آئی جگدیش بھنڈروارودیگر پولس ملازمین نے عدالت میں پیش کیا۔سرکاری وکیل ایڈوکیٹ سونندا چاورے نے معاملے کی سنگینی کے مدنظر ملزمین کوپولس کسٹڈی میں دینے کامطالبہ کیا ۔بحث کے بعد جج ہیواڑے نے ملزمین کو 12دنوں یعنی 12اپریل تک پولس کسٹڈی ریمانڈ میں بھیج دیا ہے ۔