ناندیڑ:نئی آبادی ، مخدوم نگر میں بھی پردھان منتری آواس یوجنا شروع کرنے کا مطالبہ

131

ناندیڑ۔ ۴۱ ستمبر ( نامہ نگار ):ناندیڑ شہر کے حدود میں پربھاگ نمبر ۸ کے علاقہ نئی آبادی مخدوم نگر میں مرکزی حکومت کی پردھان منتری آواس یوجنا شروع کرنے کا مطالبہ کارپوریٹر منتجب الدین کی جانب سے کیا گیا۔ انہوںنے میونسپل کمشنر سے ملاقات کر کے ایک مکتوب پیش کیا جس میں بتایا کہ تقریباً ۰۱ سال قبل نئی آبادی اور مخدوم نگر علاقہ میں بی ایس یو پی اسکیم کے تحت سروے کر کے ضرورت مند اور کچے مکانات والے خاندانوں کو بی ایس یو پی کے تحت پختہ مکانات تعمیر کر کے دیئے گئے تھے اس کے باوجود کئی افراد اسکیم سے محروم رہ گئے تھے اور یہ اسکیم ختم ہو چکی تھی ۔

مرکز میں بی جے پی کی حکومت آنے کے بعد انہوں نے پانچ سال قبل پردھان منتری آواس یوجنا شروع کی ہے۔ میونسپل کارپوریشن کی ملکیت والے زمین ہونے کا دعویٰ کر کے نئی آبادی اور مخدوم نگر علاقہ کے افرا د کو پردھان منتری آواس یوجنا سے محروم رکھا جارہا تھا۔ اس سلسلہ میں منتجب الدین نے بتایا کہ مرکزی حکومت کے قوانین میں سرکاری زمینات کا بھی ذکر موجود ہے جہاں اسکیم کے تحت مکانات کی تعمیر کر کے دی جاسکتی ہے۔

اسی طرح پچھلے دنوں نئی آبادی کے جن لوگوں کے مکانات بی ایس یو پی میں نیچے تعمیر ہو چکے تھے ان کے اوپری حصہ پر مکانات تعمیر کرنے کے لیے پردھان منتری آواس یوجنا کے تحت ڈی پی آر ۴۱ منظور ہوا ہے جس میں ۴۶ افراد کے نام شامل ہے اسی طرز پر نئی آبادی مخدوم نگر میں جو لوگ پختہ مکانات سے محروم ہے انہیں اسکیم سے فائدہ دلوانے کا مطالبہ کارپوریٹر منتجب الدین نے کیا ۔ کمشنر نے کہا کے کارپوریشن کی زمین پر شخصی مکان تعمیر کے لیے مکان مالک کو اسکیم کے تحت ڈھائی لاکھ تک کی سبسڈی مل سکتی ہے باقی رقم گھر مالک کو خرچ کرنا ہوگا۔ امکان ہے کہ اس سلسلہ میں جلد ہی مزید سروے کر کے اس کا ڈی پی آر منظوری کے لیے روانہ کیا جائے گا۔