ناندیڑمیں کرونا وائرس کے خوف سے مرغی کے گوشت کی قیمت میں کمی،تاجران پریشان

ناندیڑ: 12مارچ (ورق تازہ نیوز)کرونا وائرس کے مریضوں کی تعداد میں اضافہ کے ساتھ ہی تجارت اور کاروبار پر بھی اثر انداز ہونے لگا ہے۔سوشل میڈیا کے ذریعہ پھیلائے جارہے افوہوں اورفیک نیوز کا اثر چکن کے کاروبار پر بھی پڑنے لگا ہے۔سوشل میڈیا کے ذریعہ پھیلائی جارہی افواہوں کے مطابق چکن کے گوشت میں کرونا وائرس کے اثرات ہیں۔

چکن گوشت کے کاروباروں سے جڑے لوگوں کے مطابق چکن گوشت کی قیمت میں40فیصد کمی آگئی ہے۔دیگلورناکہ پر واقع نور والا پولٹری فارم کے مالک محمدسلیم عبدالزاق کے آج ہمارے نمائندے کوبتایا کہ ناندیڑ میں فی الحال زندہ مرغ ہول سیل میں 16تا18 روپے میںفروخت ہورہا ہے ۔ جس سے اندازہ ہوتا ہے کہ وائرس کی افواہ سے چکن کے نرخ میں تقریبا 40فیصد کمی آگئی ہے ۔جبکہ چلر تاجر زندہ مرغ 60 روپے فی کلو فروخت کررہے ہیں اورکھلا گوشت 100 روپے فی کلو فروخت کیاجارہا ہے

چندروز قبل زندہ مرغ 100 روپے فی کلو فروخت ہورہا تھا جبکہ کھلا گوشت 140 روپے فی کلوفروخت ہورہاتھا ۔انکا کہنا ہے کہ ناندیڑمیں روزانہ عام دنوں میں 20 تا22 کنٹل چکن فروخت ہوتا تھا لیکن اب حال یہ ہے کہ محض تین تا پانچ کنٹل ہی مرغ فروخت ہورہا ہے ۔جس سے اندازہ لگایاجاسکتا ہے کہ مرغ تاجروں کو بڑے پیمانے پر مالی نقصان اٹھانا پڑرہا ہے ۔