Waraqu E Taza Online
Nanded Urdu News Portal - ناندیڑ اردو نیوز پورٹل

ناندیڑمیں ملیشیاءکی جماعت کے دس افراد سرکاری دواخانہ میں کورنٹائن:اشوک چوہان

IMG_20190630_195052.JPG

ہندوستان کے کچھ شہری میں انڈونیشیا سے لوگ آئے تھے جن میں سے دس افرادناندیڑمیں تبلیغی جماعت کیساتھ آئے تھے انھیں شنکرراوچوہان سرکاری دواخانہ میں کورنٹائن رکھا گیا ہے جن کی رپورٹ آج کل میں موصول ہوجائے گی۔

ناندیڑ:6اپریل(ورق تازہ نیوز) چونکہ ابھی تک ضلع میں کوئی کورونا مریض نہیں ملا ہے ، لہذا یہ ضروری ہے کہ کورونا کے پھیلاو¿ کو روکنے کے لئے تمام کوششیں کی جائیں۔ وزیر برائے تعمیراتی کام اور ناندیڑ ضلع کے سرپرست وزیر اشوک چوہان نے کہا کہ شہری ضروری سامان خریدنے کے لئے ہجوم نہ کریں اور بغیرکوئی ضروری کام سے گھر سے باہر نہیں نکلنا چاہئے۔وہ آج کلکٹر آفس میں ضلع میں کورونا کے حوالے سے اٹھائے جارہے مختلف اقدامات کا جائزہ لے رہے تھے۔اس موقع پر ایم ایل اے موہن ہمبرڈے ، ایم ایل اے بالاجی کلیانکر ، کلکٹر ڈاکٹر۔ وپین اتنکر ، سپریٹنڈنٹ پولیس وجئے کمار مگر ، اپر ڈسٹرکٹ کلکٹر خوشال سنگھ پردیشی ، رہائشی ڈپٹی کلکٹر سچن کھلاڑ ، ڈپٹی ڈسٹرکٹ آفیسر پرشانت شیلکے ، سب ڈویڑنل آفیسر لطیف پٹھان ، ضلع ڈپٹی رجسٹرار پروین پھڈنیس ، ضلع مرکزی کوآپریٹو بینک کے چیف ایگزیکٹو آفیسر اجے کدم موجود تھے۔

سرپرست وزیر شری چوہان نے کہا کہ کسانوں اور مختلف اسکیموں کے ضرورت مند شہریوں کو باقاعدہ مدد کی ضرورت ہے۔ بینکوں کو بروقت گرانٹ ملنے کو یقینی بنانے کے لیے ضروری اقدامات کرنے چاہئے۔ گاو¿ں اور شاخ کے حساب سے رقم تقسیم کرتے وقت ٹوکن نمبر، تاریخ طے کرکے ایس ایم ایس کے ذریعہ اطلاع دی جائے۔ اسی مناسبت سے ضروری ہے کہ بینک میں رش سے بچنے کے لئے ضروری تعاون کریں اور احتیاطی تدابیر اختیار کریں۔

انہوں نے یہ بھی تجویز پیش کی کہ دودھ کے مرکز کے لئے ضروری سامان اور افرادی قوت کو ضلع میں دودھ کی وصولی بڑھانے اور ضلع میں دودھ کی جمع میں اضافہ کرنے کی کوشش کی جائے گی۔کوویڈ 19 وائرس کے پھیلاو¿ کی وجہ سے پیدا ہونے والی صورتحال پر قابو پانے کے لئے ، ضلع میں ایم ایل اے فنڈز سے فنڈز خرچ کرتے ہوئے دیہی اسپتالوں میں سے ہر ایک میں ایک ایک وینٹیلیٹر خریدنا ضروری ہے۔ حلقہ کے شہریوں کی ضروریات کو مدنظر رکھتے ہوئے ، صحت سے متعلق امور پر ترجیح دینی چاہئے۔مہاتما جیوتیبا پھولے لائف ٹائم ہیلتھ اسکیم کے ذریعے مریضوں کو مختلف صحت کی سہولیات فراہم کی جارہی ہیں۔ لاک ڈاو¿ن کے دوران ، تمام عبادت گاہیں بند کردی گئیں اور ہندوستان کے کچھ شہری میں انڈونیشیا سے لوگ آئے تھے جن میں سے دس افرادناندیڑمیںتبلیغی جماعت کیساتھ آئے تھے انھیں شنکرراوچوہان سرکاری دواخانہ میں کورنٹائن رکھاگیا ہے جن کی رپورٹ آج کل میں موصول ہوجائے گی۔