ناندیڑ:12 مارچ(ورق تازہ نیوز) ایڈوکیٹ جے پال مدھوکر دھوڑے کو وزیرآباد پولیس نے اس وقت پکڑ لیا جب اس نے اپنے جسم پر ڈیزل چھڑک کر آگ لگانے کی کوشش کی۔ ان کے خلاف تعزیرات ہند کی دفعہ 309 کے تحت مقدمہ نمبر 70/2022 درج کیا گیا ہے۔مہالوک عدالت کا انعقادآج 12 مارچ کو ناندیڑڈسٹرکٹ کورٹ کے احاطے میں کیا گیا تھا۔ وکلاء تنظیموں نے عوامی عدالت کا بائیکاٹ کیا تھا۔ اس کی مختلف وجوہات ہیں۔

11 بجے کے بعد ایڈوکیٹ جے پال مدھوکر دھوڑے عدالت کے مرکزی دروازے پر آئے اور اپنے جسم پر ڈیزل ڈال کر خود کو آگ لگانے کی کوشش کی تاہم وزیرآباد پولیس نے انھیں بروقت پکڑ لیا۔ اس سے قبل جے پال نے اپنے فیس بک پیج پر ایک عوامی خودکشی نوٹ اپ لوڈ کیا تھا جس میں کہا گیا تھا کہ جو کوئی بھی وکلاءکیساتھ ناانصافی(ججس)کرتا ہے اورسماج کے ان غنڈوں کے خلاف یہ فیصلہ لیاگیا ہے ۔ اس طرح کا تحریر تھا وزیرآباد کے پولیس ملازم مادھو ماری کی جانب سے درج کرائی گئی شکایت کے مطابق، جب پولیس سب انسپکٹر عبدالرب، پولیس ملازمین پردیشی، وجے کمار نندے، وینکٹ گنگولوار، شیخ عمران تقریباً 11 بجے عدالت کے قریب تھے، انہوں نے جے پال مدھوکر دھوڑے کواپنے جسم پر ڈیزل ڈالنے کے فوری بعد پکڑ لیا۔وزیر آباد پولس اسٹیشن میں دفعہ 309کے تحت مقدمہ درج کیاگیا۔