ناندیڑ:5مئی (ور ق تازہ نیوز)شمس العلماء مصور فطرت حضرت خواجہ حسن نظامی رحمتہ اللہ علیہ کے مرید اور حضرت خواجہ حسن ثانی نظامی فخر دہلی رحمۃ اللہ علیہ کے خلیفہ حضرت الحاج محمد فخر اللہ خان صاحب رحمتہ اللہ علیہ ( بانی رکن دارالعلوم کربلا ناندیڑ، بانی رکن مدینتہ العلوم ناندیڑ، مدرسہ ملیہ ناندیڑ، مدرسہ نظام العلوم ناندیڑ، متولی مسجد خواجگان۔ بانی بستی حضرت خواجہ حسن نظامی (نظامی کالونی) ناندیڑ) کے بڑے فرزند حضرت الحاج محمد عزیز حسن خان صاحب نظامی مختصر علالت کے بعد بروز چہارشنبہ کی صبح اس دنیا سے کوچ کرگئے۔ نماز جنازہ بعد نماز ظہر مسجد احاطہ درگاہ حضرت احمد بادپا رحمتہ اللہ علیہ فرسٹ لانسر ، حیدرآباد دکن میں ادا کی گئی اور متصل قبرستان میں تدفین عمل میں آئی۔

خان برادران کے خاندان میں پہلے لڑکے ہونے کی وجہ سے سارے بچے انھیں ” بڑے بھائی” کے نام سے پکارتے تھے۔موصوف فخر سے بات کہا کرتے کہ میں محترم ایڈوکیٹ بہاؤ الدین صاحب کا شاگرد ہوں۔ مرحوم حیدرآباد کے ایک آئی ٹی آئی میں انسٹرکٹر تھے۔حضرت خواجہ صاحب سے والہانہ محبت و عقیدت تھی۔ صوم صلوۃ کے پابند و اچھے اوقات کے مالک تھے۔سارے خاندان والوں نے مسجد خواجگان ناندیڑ سے متعلق تمام اراضی و درگاہ حق دار شاہ حضرت عبدالقادر بلگامی نیلم نظامی رحمتہ اللہ علیہ کی تولیت بخشی تھی۔ آپ کی شریکِ حیات حضرت حق دار شاہ نظامی کی نواسی ہیں۔

مجھ سے بڑی شفقت سے پیش آتے۔ جب بھی فون کرتے آدھے گھنٹے سے کم بات نہ کرتے۔ حضرت خواجہ صاحب کے واقعات اور سارے خاندان کی باتیں سناتے لیکن کسی کی غیبت نہیں کرتے۔اس مقدس مہینے میں ان وفات نیکی کو ظاہر کرتی ہے۔اللّٰہ تعالٰی سے دعا ہے کہ انہیں اپنے جوار رحمت میں داخل فرمائے ، درجات بلند فرمائے ، جنت الفردوس میں اعلیٰ مقام عطا فرمائے اور تمام پسماندگان کو صبر جمیل عطا فرمائے آمین ثمہ آمین
عبدالملک نظامی ناندیڑ