• 425
    Shares

ناندیڑ:25اگست۔ (ورق تازہ نیوز)شہرناندیڑمیں کورونا کے مریضوں کی تعدادمیںکمی آئی ہے لیکن دوسری وباءامراض بھی تیزی سے پھیل رہے ہیں ۔بالخصوص ڈینگو اورچکن گنیا جیسے امراض کے مریضوں کی تعداد کافی بڑھ گئی ہے۔شہر میں ڈینگو کے مچھروں کی افزائش اوراسکے خاتمہ کیلئے کارپوریشن انتظامیہ کی جانب سے کوئی ٹھوس اقدامات نہیںکئے جارہے ہیں۔ڈینگوسے کم عمر بچے زیادہ متاثر ہورہے ہیں

۔شہر میں مختلف مقامات پر کھلے میدان ہے اورنالیوں میں جمع ہونے والے پانی سے ڈینگوکے مچھروںکی افزائش ہورہی ہے۔ایسے مقامات پر جراثیم کش دوا کاچھڑکاﺅ کرنا بہت ضروری ہے لیکن کارپوریشن کا جراثیم کش دواکاچھڑکاو کرنے کادستہ غائب نظر آرہا ہے۔قدیم شہرکی وہ بستیاں جہاںپر عوام آج بھی بنیادی سہولیات سے محروم ہیں وہاںکے حالات کافی ابترہے ۔

بالخصوص اقبال نگر ‘گاڑے گاوں روڈ‘لکشمی نگر ‘ ٹیپوسلطان روڈاور اس سے متصل گلشن کالونی ‘گلزارباغ ‘اسلام پورہ ‘ پاکیزہ نگر ‘حلال نگر ‘بلال نگر ‘ملت نگر اور آس پاس کی بستیوں میں جگہ جگہ پانی جمع ہوا ہے جہاں پرڈینگو کے مچھرکافی زیادہ بڑھ رہے ہیں۔اس کے علاوہ نئے شہر کے کھڑکپورہ ‘دلہے شاہ رحمن نگر ‘سمیر اباغ ‘سیلاب نگراوردیگرعلاقوں میں نالیوں کی صفائی وقت پرنہیں ہورہی ہے ۔بلکہ کچھ مقامات پر ڈرینج لائن ٹوٹ پھوٹ کاشکار ہے اسلئے یہ گندا پانی بھی سڑکوں پرآرہاہے۔ اس گندگی سے ڈینگو کے مچھر بڑھ رہے ہیں اورسرکاری و خانگی اسپتالوںمیں ڈینگو کے مریض بھرے پڑے ہیں۔میونسپل کارپوریشن انتظامیہ کو شہر کی سلم بستیوں میں صاف صفائی کی خصوصی مہم روبہ عمل لانے کی ضرورت ہے ۔

ورق تازہ نیوز اب ٹیلی گرام پر بھی دستیاب ہے۔ ہمارے چینل کو جوائن کرنے کے لئے یہاں کلک کریں  https://t.me/waraquetazaonlineاور تازہ ترین خبروں سے اپ ڈیٹ رہیں۔