ناندیڑ:شردھاواکر قتل کی مذمت میں ہندوتنظیموں کا خاموش مورچہ

456

حمایت نگر:28نومبر ( ورقِ تازہ نیوز)شردھا واکر کے قتل کے خلاف شہر کی پوری ہندو برادری کی جانب سے 28 نومبر کو کی صبح حمایت نگر میںشری پرمیشور مندر سے تحصیل آفس تک خاموش مارچ نکالا گیا۔ اس مارچ میں لڑکیوں سمیت سینکڑوں خواتین و عوام نے شرکت کی۔ دہلی میں شردھا واکر قتل کیس کے بعد ملک بھر میں غصے کی لہر دوڑ گئی ہے، تمام سیاسی جماعتوں اور تنظیموں کی جانب سے اس پر احتجاج کیا جا رہا ہے۔

اس پس منظر میں حمایت نگر میں پوری ہندو برادری کی طرف سے ڈی شری پرمیشور مندر سے ایک خاموش احتجاجی مارچ نکالا گیا۔ یہ احتجاجی مارچ جس میں شہر کے تمام کالجوں اور سکولوں کے طلبا ، طالبات، خواتین اور شہریوں نے شرکت کی جو شہر کے مختلف راستوںسے گزرتے ہوئے تحصیل دفتر پہنچا۔

تحصیلداروں کو ایک میمورنڈم دیتے ہوئے مطالبہ کیا گیا کہ ملک میں لو جہاد کے خلاف قانون اور تبدیلی مذہب کے خلاف قانون کو نافذ کیا جائے۔واضح رہے کہ ناندیڑ شہر میں بھی 29 نومبر کو مختلف ہندوتنظٰموں نے خاموش مورچہ نکالنے کافیصلہ کیا ہے۔