ناندیڑ:سوپنل ناگیشورقتل معا ملے میں سات مسلم نوجوان گرفتار

1,768

ناندیڑ:23نومبر ( ورقِ تازہ نیوز) ناندیڑ کی لوکل کرائم برانچ نے 48 گھنٹے کے اندر اندر گوداوری ندی کے کنارے سوپنیل ناگیشور کا قتل کرنے والے گینگ کے 7 افراد کو ائیرپورٹ تھانہ علاقہ سے ڈنکن لانے کے بعد گرفتار کر لیا ہے۔پولیس کے مطابق ناندیڑ شہر میں ایک نوجوان کا قتل 21 نومبر کو گوداوری ندی کے کنارے واقع اوورشی مندر کے قریب ایک درگاہ کے سامنے رونما ہواتھا۔

متوفی سوپنل سیشاراو¿ ناگیشور (30) کو ایک ہجوم نے لڑکی کے ساتھ ہوائی اڈے پولیس اسٹیشن حدود کے علاقہ سے اٹھا لیا۔ ہوائی اڈے پولیس اسٹیشن میں تعزیرات ہند کی دفعہ 302، 364، 143، 147، 148، 149 کے تحت مقدمہ نمبر 398/2022 معشوقہ کو بدنام کرنے اور سوپنیل ناگیشور کو قتل کرنے کے الزام میں درج کیا گیا ہے۔ اس واقعہ سے شہر کے حالات بھی خراب ہوسکتے تھے لیکن پولیس نے جلد از کاروائی کرکے ملزمین کی گرفتاری کی۔

ناندیڑ لوکل کرائم برانچ کے پولیس انسپکٹر دوارکا داس چکھلیکر کی ٹیم نے ڈپٹی انسپکٹر جنرل آف پولیس نثار تنبولی، سپرنٹنڈنٹ آف پولیس سری کرشنا کوکاٹے، ایڈیشنل سپرنٹنڈنٹ آف پولیس ابیناش کمار، کھدیراو دھرنے کی رہنمائی میں جانچ شروع کردی۔اور سی سی ٹی وی کی دستیاب فوٹیج سے پتا چلا کہ مقدمے کا مرکزی ملزم شہباز خان اعجاز خان (24) ساکن پکی چال ناندیڑکو 23 نومبر کو حراست میں لیاگیا۔ جرم کے بارے میں تفصیلی معلومات ملنے کے بعد علم ہوا کہ اس واردات میں محمد صدام محمد ساجد قریشی (20) ساکن مل گیٹ، محمد اسامہ محمد ساجد قریشی (20سال) سومیش کالونی، شیخ آیان شیخ امام (20) اسر نگر، سہیل خان (19) رہائشی سندر نگر، سید فاران عرف ساحل سید ممتاز (19) ساکن۔ مومن گلی مکھیڑ‘ حال مقیم اسریٰ نگر، عبید خان یونس خان (23) رہائشی۔ چوپالہ ملوث ہے۔ ان ساتوں قاتلوں کو لوکل کرائم برانچ پولیس نے گرفتار کر کے مزید تفتیش کے لیے ایئرپورٹ پولیس کے حوالے کر دیا ہے۔

ڈپٹی انسپکٹر جنرل آف پولیس نثارتنبولی، پولیس سپرنٹنڈنٹ سری کرشنا کوکاٹے، ایڈیشنل سپرنٹنڈنٹ آف پولیس ابیناش کمار، کھدے راو دھرنے نے یعنی لوکل کرائم برانچ کے پولس انسپکٹر دوارکاداس چکھلیکر، اسسٹنٹ پولیس انسپکٹر پڈورنگ مانے، پولس سب انسپکٹر سچن سونونے، گوئندراو منڈے، پولیس اہلکار سنجے کیندرے، گنگادھر کدم، ولاس کدم، موتی رام پوار، ہیمنت بیچیوارودیگر محنت کررہے ہیں۔