• 425
    Shares

ناندیڑ:12 ستمبر۔ (ورق تازہ نیوز)محکمہ ریلوے میںٹی سی اور کلرک کے عہدہ پر ملازمت دینے کاجھانسہ دے کر دیگلور اورمکھیڑ تعلقہ کے آٹھ نوجوانوں کو 30لاکھ روپیوں کادھوکہ دینے کے معاملے میں دیگلور پولس نے کولہاپور سے تین افراد کوگرفتارکیا ہے ۔ان افراد کی گرفتاری کے بعد ایک بڑے ریاکٹ کاپردہ فاش ہونے کاامکان ہے۔اس طرح کی معلومات پی آئی بھگوان راو دھبڑگے نے دی ہے۔ دیگلور شہر کے پیٹھ امراپور گلی کے مدھوکر وٹھل راو پاٹل اورمہادیوی مدھوکر پاٹل اس میاں بیوی نے کہا کہ انکا بیٹا پرتاپ مدھوکر پاٹل منترالیہ میں چیمبرآفیسر ہے اوتعلیم یافتہ نوجوانوں کو ملازمت دلواتا ہے ۔سیاسی لیڈروںسے اثر و رسوخ ہے ۔ریلوے محکمہ میں بھی اچھی پہچان ہے ۔اور سکندر آباد ریلوے ڈویژن میںٹی سی اور کلرک کے عہدہ پرملازمت دلوانے کادعویٰ اس جوڑے نے کیاتھا ۔

ٹی سی کےلئے چھ لاکھ اور کلرک کےلئے تین لاکھ روپے کاریٹ مقرر کیاگیاتھا۔دیگلور اور مکھیڑ تعلقہ کے آٹھ تعلیم یافتہ نوجوانوں سے ان دونوں میاں بیوی نے تیس لاکھ روپیے حاصل کئیے تھے اس کے بعدسکندر ریلوے بورڈ کااپاٹمنٹ لیٹراوردیگر دستاویزات تیار کرکے ان نوجوانوں کے سپردکردئےے گئے ۔ دیگلور کے رامپورروڈ کے یشونت کالی داس سے 5لاکھ 80ہزار‘سنگرام پربھاکر جادھوسے5لاکھ 30ہزار‘کاماجی دیوی داس سے تین لاکھ ‘کرن مکاجی سے چار لاکھ ‘پروین ہنمنت راو تیلنگے سے تین لاکھ اس طرح تقریبا تیس لاکھ10ہزار روپے ان تمام سے مدھوکر پاٹل اور مہادیو پاٹل نے لئے تھے۔

دیگلور پولس نے ناندیڑ کے ایس پی پرمودکمار شیوالے ‘ ڈی واے ایس پی سچین سانگڑے ‘پی آئی بھگوان راو ‘اے پی آیی منڈے کی رہنمائی میں کاروائی انجام دی گئی اور مذکورہ دونوں میاںبیوی اوراسکے بیٹے پرتاپ کوبھی گرفتار کرلیاگیا ہے ۔اس ریاکٹ میںاورکتنے افرادشامل ہے اس بات کا بھی پولس پتہ لگارہی ہے۔

ورق تازہ نیوز اب ٹیلی گرام پر بھی دستیاب ہے۔ ہمارے چینل کو جوائن کرنے کے لئے یہاں کلک کریں  https://t.me/waraquetazaonlineاور تازہ ترین خبروں سے اپ ڈیٹ رہیں۔