ناندیڑ:رضااکیڈیمی سے ایک کروڑ روپے وصول کئے جائیں گے

ناندیڑ:21مئی (ورق تازہ نیوز) ناندیڑ میں پچھلے سال دو مختلف فسادات میں پتھراو  سے ہونے والے نقصان کے لیے 1.76 کروڑ روپے کا معاوضہ ملزمین سے بازیابی کا فیصلہ ضلع کلکٹر کی سربراہی میں ایک کمیٹی نے کیا ہے۔ میونسپل کمشنر کو اس رقم کی وصولی کا حکم دیا ہے۔ ناندیڑ ضلع میں یہ پہلا موقع ہے جب اتنی بڑی رقم کے ہرجانے کی وصولی کا فیصلہ کیا گیا ہے اور مقدمہ چلتے ہوئے ملزم کو معاوضہ ادا کرنا پڑے گا۔ضلع کلکٹر کے حکم کے مطابق تشکیل دی گئی کمیٹی نے معاوضے کی رقم طے کرنے کے بعد اس کی وصولی کے لیے میونسپل کارپوریشن کو 3 فیصد فیس ادا کی ہے اور اس ریکوری پر ایک طرح کا قانونی کمیشن دیا ہے۔

حکومت کے غیر زرعی ٹیکس کی وصولی میں میونسپل کارپوریشن کو بھی اسی طرح اپنا حصہ ملتا ہے۔ 29 مارچ کو شہر میں ایک مذہبی جلوس کے دوران سیکورٹی فورسز پر حملہ کیا گیا اور پولیس کی گاڑیوں کو نقصان پہنچایا گیا۔ وزیرآبادپولس اسٹیشن میں تین مختلف مقدمات میں 107 ملزمان کے خلاف چارج شیٹ دائر کی گئی تھی۔ اس معاملے میں، سرکاری اور دیگر املاک کو نقصان پہنچانے کے معاملے میں مہاراشٹر پولیس ایکٹ کی دفعہ کے تحت ضلع کلکٹر کے پاس معاوضے کی تجویز داخل کی گئی تھی۔ اس کمیٹی کے مطابق نقصان بھرپائی کی 70لاکھ35 ہزار277 روپے اور بھرپائی رقم کاتین فیصد یعنی 2 لاکھ 11ہزار58 روپے میونسپل کارپوریشن کووصولی خرچ سمیت 72لاکھ46ہزار335 روپے کی رقم وصول کرنے کاحکم دیاگیا ہے۔ مہاراشٹر پولیس ایکٹ کی دفعہ 51 اور 24 اور دیگر سیکشنز اور ذیلی دفعہ کے ساتھ ساتھ مروجہ حکومتی احکامات کے مطابق میونسپل کمشنر کو اس رقم کی وصولی کا حکم دیا گیا ہے۔ پولیس سپرنٹنڈنٹ پرمود شیوالے نے بتایا کہ اس تجویز پر فیصلہ لینے کے لیے ضلع کلکٹر کی جانب سے مزید کارروائی کی جا رہی ہے۔ اس کے علاوہ ریاست تریپورہ میں پیش آنے والے واقعے کی وجہ سے 12 نومبر 2021 کو انتظامیہ کی اجازت کے بغیر چھٹی والے دن ناندیڑ بند اور دھرنے ایجی ٹیشن کا اہتمام کیا گیا۔

احتجاج کے دوران کچھ لوگوں نے پتھراو¿ کیا اور پولیس کی گاڑیوں کے ساتھ ساتھ نجی اور سرکاری املاک کو بھی کافی نقصان پہنچایا۔ اتوارہ، ناندیڑ گرامین، وزیرآباد، شیواجی نگر اور ایئرپورٹ ان پانچ پولیس اسٹیشنوں میں چھ مختلف کیس درج کیے گئے۔ مظاہرین اور کم عمر بچوں کے والدین کے ساتھ ساتھ رضا اکیڈمی سے، جو دھرنے اور ناندیڑ بند ایجی ٹیشن کو منظم کر رہی تھی، سے مہاراشٹر پولیس ایکٹ کے تحت معاوضے کی وصولی کے لیے ضلع کلکٹر کو ایک تجویز پیش کی گئی۔ ضلع کلکٹر کی طرف سے تشکیل دی گئی کمیٹی نے تمام ملزمان سے مجموعی طور پر99 لاکھ27 ہزار664 روپے نقصان بھرپائی اور بھرپائی کی رقم کا3فیصد 2لاکھ97ہزار829 روپے کارپوریشن وصولی خرچ سمیت 1 کروڑ 2 لاکھ 25ہزار‘473 روپے کی رقم جرم میںشامل تمام ملزمین سے وصول کرنے کاحکم دیاگیا ہے۔ پولیس سپرنٹنڈنٹ پرمود شیوالے نے کہا کہ میونسپل کمشنر کو دونوں معاملوں میں ملزمان سے بازیابی کا اختیار دیا گیا ہے۔