• 425
    Shares

ناندیڑ:30 جولائی(ورق تازہ نیوز)این اے لے آوٹ کے بغیر زمین میں سڑکیں بنانے اور پلاٹنگ کرنے والوں کے خلاف میونسپل کارپوریشن نے زبردست مہم شروع کردی ہے۔ اس ضمن میں اتوارہ پولس اسٹیشن میںبارہ زمین مالکان کے خلاف مقدمہ درج کیاگیا ہے۔جس میںتین خواتین بھی شامل ہے۔دیگلور ناکہ کے حیدرباغ اسپتال تامال ٹیکڑی فلائی اووربریج کی شمال کی جانب میں یہ پلاٹنگ کی گئی ہے۔

تفصیلات کے مطابق گٹ نمبر156/2میں زمین مالک و قبضہ دار اکشت دنیش پریم چندنانی‘اندرجیت مرلی دھر پریم چندنانی ]‘اشوک رمیش چندر شاہ ‘ غفار چاول والا ‘عبدالمقیت عبدالغفار چاول والا ‘عبدالقیوم عبدالغفار چاول والا‘شیخ سہیل احمد عبدالغفار چاول والا ان سات افراد نے غیر قانونی طور پر پلاٹنگ کی اور اس میں سڑکیں بناڈالی۔اس بات کاانکشاف ہونے پر میونسپل کارپوریشن کے زون نمبر 5اتوارہ کی جانب سے 26 اپریل 2021ءکو پنچنامہ کیاگیاتھا ۔اور پھر 25 مئی 2021 کو مہاراشٹر شہری ترقیات ایکٹ 1953 کے تحت نوٹس بھی جاری کی گئی۔

اس نوٹس کے بعد کوئی جواب ان افراد نے نہیںد یااور پلاٹنگ برقرار تھی ۔اس کے علاوہ گٹ نمبر156/1 میں مالک وقبضہ دار زیتون بی محمدیوسف‘عطیہ سلطانہ یوسف ‘ممتاز بیگم سلیم خان اور محمد شاہد و محمد شہباز محمد یوسف کی جانب سے زیتون بی محمدیوسف نے غیر قانونی پلاٹنگ و لے آوٹ تیار کرکے اسکی فروخت شروع کردی ۔ ان دونوں معاملات میں اتوارہ زونل دفتر نے اتوارہ پولس اسٹیشن میں شکایت درج کروائی اورمقدمہ درج کیاگیا۔

ورق تازہ نیوز اب ٹیلی گرام پر بھی دستیاب ہے۔ ہمارے چینل کو جوائن کرنے کے لئے یہاں کلک کریں  https://t.me/waraquetazaonlineاور تازہ ترین خبروں سے اپ ڈیٹ رہیں۔