ناندیڑ:15 اپریل۔(ورق تازہ نیوز) ناندیڑ ضلع کے لوہاشہرمیں قیام پذیر شنکر گندم عمر 40سال کی کوروناسے موت ہوگئی تھی جس کے بعد ان کی اہلیہ پدما (عمر 35) نے اپنے بیٹے للی (عمر 3) کے ساتھ خود کشی کرلی۔ شنکر اور پدما اپنے تین بچوں کے ساتھ لوہا شہر میں قیام پذیر تھے۔ اصل میں آندھرا پردیش سے تعلق رکھنے والا شنکر اپنے خاندان کی کفالت کے لئے مزدور کی حیثیت سے کام کرتا تھا۔ منگل کے روز لوہا کے ایک دیہی اسپتال میں شنکر گندم کا اینٹیجن ٹیسٹ ہوا۔ وہ مثبت آیا۔

ڈاکٹر نے اسے فوری طور پر اسپتال میں داخل کروایا۔ شام تقریبا ساڑھے پانچ بجے بیوی پدما اپنے شوہر سے ملنے اسپتال پہنچی۔ یہ جوڑے کی آخری ملاقات تھی۔ پدما کو اسپتال سے فارغ ہونے کے فورا بعد ہی شنکر چل بسا۔جب پدما کوشوہر کی اچانک موت کاعلم ہوا یہ صدمہ برداشت نہیں کر سکی اوربدھ کی صبح ، پدما اپنی دو بیٹیوں کو گھر پر چھوڑ کر اپنے بیٹے للی کے ساتھ چلی گئی۔

اس نے اپنے بیٹے کے ساتھ جھیل میں کود کر اپنی زندگی کا خاتمہ کیا۔شنکر کی موت اور پدما کے بعد کی خودکشی نے دو کمسن لڑکیوں کو یتیم کردیا ہے۔ سوال یہ ہے کہ ان کی دیکھ بھال کون کرے گا۔ اس واقعہ سے علاقے میں سوگ کا ماحول ہے۔