ناندیڑ:تین جائیداد مالکان کی آٹھ دوکانیں سیل

472

ناندیڑ:21نومبر ( ورقِ تازہ نیوز) ناندیڑ واگھالاشہر میونسپل کارپوریشن کے کمشنر سنیل لہانے نے جائزہ میٹنگ میں تمام علاقائی دفاتر کو ہدایت دی ہے کہ وہ ٹیکس وصولی میں اضافہ کریں کیونکہ اس وقت وصولی کی رقم کم ہے، ٹیکس وصولی کے مقصد کو حاصل کرنے کے لیے جائیداد ضبط کرکے لازمی ٹیکس وصولی کی ہدایات دی گئی ہیں۔

ریجنل آفس کی جانب سے چار دنوں میں سولہ جائیدادوں کو سیل کر دیا گیا کیونکہ پراپرٹی ٹیکس کے بقایا جات کے مالکان نے پراپرٹی ٹیکس ادا کرنے سے انکار کر دیا تھا۔آج 21 نومبر 2022 علاقائی دفتر وزیر آبادنمبر 4 کے تحت۔املاک نمبر 5-4-160 پر واجب الادا 5 لاکھ 17 ہزار 237 روپے کی وجہ سے متعلقہ مالک کی تین دکانیں سیل کر دی گئیں۔ چونکہ مذکورہ پراپرٹی کے مالک نے نوٹس وصول کرنے سے انکار کر دیا، نوٹس متعلقہ پراپرٹی کے اگلے حصے پر چسپاں کر دیا گیا۔

وزیرآباد آفس نے دوسری کارروائی میں بھی۔ پراپرٹی نمبر 5-4-138 روپے پر پراپرٹی اور واٹر ٹیکس 2 لاکھ 30 ہزار 993/ واجب الادا ہونے پر مذکورہ پراپرٹی کی دو دکانوں کو سیل کر کے نل کنکشن منقطع کردیاگیا۔علاقائی دفتر نمبر 2 کے تحت اشوک نگر میںاپرٹی نمبر 1-17-488 پر ایک لاکھ 11 ہزار 834 روپے کے ٹیکس بقایا جات کی وجہ سے دو دکانیں سیل کر دی گئیں۔

آج کی کارروائی ایڈیشنل کمشنر گریش کدم، ڈپٹی کمشنر نیلیش سوکیوار، تروڑاسانگوی آفس کے علاقائی افسر سنجے جادھو، رمیش واگھمارے، اظہر علی، ہردیپ سندھ کرن سنگھ، گریش کاٹھیکر، سنجے سنگھ بیس اور ٹیم کے ساتھ ساتھ اشوک نگر آفس کے علاقائی افسر کی رہنمائی میں کی گئی ہے۔شہر کے املاک مالکان سے اپیل ہےکہ وہ اپنے ٹیکس بقایاجات کی جلدازجلد ادائیگی کرکے ضبطی کی کاروائی سے بچیں۔