ناندیڑ:بی جے پی کے سرگرم کارکن ڈاکٹر دیوآنند کی خودکشی

ناندیڑ:25مئی (ورق تازہ نیوز) بھارتیہ جنتا پارٹی (بی جے پی) کے ایک سرگرم رکن ڈاکٹر دیوآنند جاجو نے 25 مئی کی رات اپنی رہائش گاہ پر نیند کی گولیاں کھا کر خودکشی کر لی۔اس معاملے میں دیہی پولیس اسٹیشن میں اتفاقی موت کامعاملہ درج کیا ہے ۔ مگر علاقہ میں انکی دل کادورہ پڑنے سے موت یا پھر خودکشی پر بحث چل رہی تھی۔ ناندیڑ واگھالا میونسپل کارپوریشن کی سابق کارپوریٹر اور بی جے پی کی سرگرم رکن ڈاکٹر سریکھا جاجو کے شوہر دیوآنند جاجو پچھلے کئی سالوں سے سڈکو علاقہ میں جاجو اسپتال کے ذریعہ خدمات فراہم کررہے ہیں۔

وہ حال ہی میں اپنی بیوی اور بیٹی کی تعلیم کے لیے ممبئی منتقل ہوئے ہیں۔ وہ خوش مزاج طبعیت کے مالک تھے وہ 24مئی کو علاقے میں خاندانی تقریب میں شرکت کے بعد گھر واپس آئے۔ روزمرہ کی طرح آج صبح بھی ہسپتال کے قریب میڈیکل اسٹور والے نے ڈاکٹرجاجوکو فون کیا لیکن فون نہ اٹھانے کی وجہ سے اس نے اپنے سامنے موجود پولس چوکی سے ربط قائم کیا۔ پولس اور مقامی لوگوں نے اسپتال کادروازہ توڑااور اندرداخل ہوئے ۔

اسپتال کے دوسرے منزلہ پروہ پلنگ پر مردہ حالت میں پائے گئے ۔ان کے قریب ایک میز پر نیند کی گولیوں کاپیکیٹ تھا۔ دیہی پولیس اسٹیشن کے پولیس انسپکٹر لکشمن راکھ کے مطابق اس نے نیند کی گولیاں کھا کر خودکشی کی۔جب علاقے کے انکے کچھ طبی دوستوں نے انکا طبی معائنہ توانکا کہناتھا کہ انکی موت دل کا دورہ پڑنے سے ہوئی ہے۔ لاش کو پوسٹ مارٹم کے لیے سرکاری اسپتال وشنو پوری لے جایا گیا۔ اہل خانہ کے آنے کے بعد ہی ان کی آخری رسومات ادا کی جائیں گی۔ ان کے پسماندگان میں اہلیہ اور دو بیٹیاں ہیں۔