ہنگولی گیٹ تا دیگلورناکہ راستے دھنے گاوں تک فلائی اووربریج کے تعمیری کام کاجلد آغاز
ناندیڑ:30 مارچ(ورق تازہ نیوز) جہاں ریاستی حکومت ناندیڑ شہر اور ضلع کی ترقی کے لیے کروڑوں روپے نکال رہی ہے، وہیں سرپرست وزیر اشوکراو چوان نے ناندیڑ میں لاکھوں عقیدت مندوں کی عبادت گاہ وشنوپوری میں شری کالیشور مندر کے علاقے کی ترقی پر خصوصی توجہ دی ہے۔ ضلع میں 12.25 کروڑ روپے کے کاموں کی انتظامی منظوری دی گئی ہے۔ جس میں سے 4.62 کروڑ روپے کی منظوری دی گئی ہے۔

ضلع کے سرپرست وزیر اشوک راو  چوہان نے مہاویکاس اگھاڑی کے ذریعہ شہر اور ضلع میں سڑکوں کے نیٹ ورک کو مضبوط بنانے پر زور دیا ہے۔ ریاستی حکومت نیلا جنکشن سے دھرم آباد تک کے نئے راستے پر تقریباً 1,000 کروڑ روپے خرچ کرے گی۔ اس کے علاوہ، ناندیڑ شہر کے ہنگولی گیٹ سے دیگلورناکہ تک دھنے گاو¿ں چوک کے راستے پر تقریباً 1,000 کروڑ روپے کا فلائی اوورکا کام جلد ہی شروع کیا جائے گا۔ اس کے علاوہ ناندیڑ میں تقریباً 700 کروڑ کی لاگت سے سڑکیں بنانے کاکام ہاتھ میں لیاگیاہے۔ سرپرست وزیر اشوک راو  چوہان نے شری کالیشور مندر کے علاقے کی ترقی پر بھی خصوصی توجہ دی ہے جو ہزاروں عقیدت مندوں کی عبادت گاہ ہے اور وشنو پوری پروجیکٹ کے کنارے واقع ہے۔

ضلعی منصوبہ بندی کمیٹی کے ذریعے انہوں نے علاقے میں بوٹنگ کلب، ایڈونچر پارک اور دیگر خدمات فراہم کرنے کے لیے 12.25 کروڑ روپے کے کاموں کی منظوری دی ہے۔ضلع کلکٹر ڈاکٹر وپن اتنکر نے انتظامی احکامات جاری کیے ہیں۔ اس 12.25 کروڑ میں سے 4.62 کروڑ ضلعی منصوبہ بندی کمیٹی نے فراہم کیے ہیں۔