ناندیڑ: بازاروں میں دوکاندار کاروبارکھولنے پہنچ گئے لیکن انتظامیہ نے اجازت نہیں دی

ناندیڑ:25 اپریل: (ورق تازہ نیوز)کل رات دیر مرکزی وزارت داخلہ نے لاک ڈاون کے دوران ایک اہم احکام جاری کرتے ہوئے کہا کہ 25اپریل سے ملک بھر میں اشیاءضروریہ کے علاوہ دیگر ہر طرح کی دوکانیں و کاروبار کچھ شرائط کے ساتھ کھول دئےے جائیں گے ۔

کل رات یہ احکام میڈیا تک پہنچنے کے بعد مختلف ویب سائٹس پر اسکی خبر شائع ہوگئی اور صبح کے ٹی وی نیو ز بلیٹن میں سب سے پہلے یہ خبر نشر ہوئی ۔لاک ڈاون سے کاروبار پوری طرح ٹھپ ہونے سے پریشان حال تاجروں کیلئے یہ خبر کسی بڑی خوشخبری سے کم نہیں تھی اسلئے وہ کل رات جب انھیں یہ خبر معلوم ہوئی صبح کی اولین ساعت میں دوکان کھولنے کی تیاری میں مصروف ہوگئے ۔

آج ناندیڑ کے سبھی اہم تجارتی بازاروں یعنی چوک بازار ‘ محمدعلی روڈ‘منیار گلی ‘اتوارہ ‘ وزیر آباد ‘سری نگر کے علاوہ دیگر اہم کاروباری علاقوں میں سینکڑوں کی تعداد میں تاجر اپنی دوکانیں کھولنے کیلئے اکٹھا ہوگئے لیکن پولس نے انھیں کاروبار کھولنے سے منع کردیااور واضح الفاظ میں کہا کہ ابھی ضلع انتظامیہ کی جانب سے اشیاءضروریہ کی دوکانوں کوچھوڑ کر کسی بھی دوسری دوکانوںیا کاروباری ادارہ کو کھولنے کی بالکل اجازت نہیں دی گئی ہے ۔

اسلئے تاجر مایوسی کے ساتھ اپنے گھروں کو لوٹ آئے ۔تاجروں کا کہنا ہے کہ مرکزی حکومت کے فیصلہ پرریاستی حکومت اپنا موقف واضح نہیں کررہی ہے جس سے تاجر تذ بذب کاشکار ہے ۔ مہاراشٹر حکومت کا کہنا ہے کہ ابھی انھوں نے مرکزی حکومت کے اس فیصلہ پرکوئی رئے ہموار نہیں کی ہے اس ضمن میں ریاستی وزارت سے تبادلہ خیال کے بعد کوئی فیصلہ لیا جائے گا۔دریںاثناءآج دوپہر مرکزی وزارت داخلہ نے اپنے فیصلہ میں مزید وضاحت دیتے ہوئے کہا کہ شہر کے اہم بازاروں اور ہجوم کے مقامات کی دوکانیں بالکل نہیں کھلیں گی صرف رہائشی علاقوں میںواقع دوکانوں کو کھولنے کے احکامات دئےے گئے ہیں۔جبکہ دیہی علاقوں میں ہر طرح کے کاروبار شروع کرنے کی اجازت رہے گی ۔

مرکزی وزارت داخلہ کے ا س احکام سے آج دن بھر تاجروں میں افراتفری رہی ۔مگر ریاستی حکومت کے فیصلہ کے بعد ہی مہاراشٹرمیں ہر طرح کی دوکانوں کو کھلی رکھنے پر کوئی عمل آوری ہوگی ۔