ناندیڑ:20۔اپریل(ورق تازہ نیوز)رندا کی طرف سے جولائی 2021 میں پرتاپ پاٹل چکھلیکر کو لکھا گیا 10 کروڑ روپے کھنڈنی کا خط آج انھوں نے عام کیا۔ ساتھ ہی کھلیکر نے بھی کہا کہ پولیس نے انہیں سنجیدگی سے نہیں لیا۔ سیاسی دباو کی وجہ سے مجھے تحفظ نہیںدیاگیااور کوئی کاروائی بھی نہیں ہوئی ۔ضلع کلکٹر کو بھی اطلاع دی گئی تھی ۔کچھ دن پہلے ایم پی پرتاپ پاٹل چکھلیکر نے کہا تھا کہ 20 اپریل کو سنجے بیانی کے قتل کے خلاف میں ذاتی طور پر احتجاج کروں گا۔

آج پرتاپ پاٹل چکھلیکر مترا منڈل کی گاڑیاں ضلع کلکٹر کے دفتر کے قریب کئی سڑکوں پر کھڑی تھیں۔ دھرنے پرتاپ پاٹل چکھلیکر نے بہت کچھ کہا۔ انہوں نے ضلع کلکٹر ناندیڑ کو بھی ایکمیمورنڈم دیا۔جس کی ایک کاپی اسپیشل انسپکٹر جنرل آف پولیس، ناندیڑ رینج ناندیڑ اور سپرنٹنڈنٹ آف پولیس ناندیڑ کو سونپی گئی۔ جولائی 2021 میں، انھیں رندا کی طرف سے ایک خط موصول ہواتھا۔ اس خط پر ایم پی پرتاپ پاٹل چکھلیکر وسنت نگر ناندیڑکاپتہہے۔ اس خط کی زبان مختصر ہندی میں لکھی گئی ہے۔ ساتھ ہی خط میں موجود خطوط سے لگتا ہے کہ کسی نے لکھا ہے جو تھوڑا پڑھا لکھا ہے۔ جبکہ آٹھ تا دس کروڑ روپے کامطالبہ کیاگیاتھااوررقم کی عدم ادائیگی پرجان سے مارنے کی دھمکی بھی دی گئی۔پرتاپ پاٹل نے پولس کے نرم رویہ پر برہمی کااظہار کیا اورکہا کہ سیاسی دباو کی وجہ سے اُن کی سیکوریٹی پر توجہ نہیں دی جارہی ہے ۔