ناندیڑ:آخری مشتبہ مریضوں کی رپورٹ بھی منفی‘ کرفیو کے مدنظر شہریان گھروں میں بند

اندیڑ:24۔ مارچ (ورق تازہ نیوز)ناندیڑ کے سرکار دواخانہ کے کورونا وارڈ میں داخل مشتبہ مریضوں کی رپورٹ آگئی جو منفی رہی ہے۔ اس لئے ناندیڑضلع میں اب ایک بھی کرونا وائرس کامشتبہ مریض نہیںہے۔گزشتہ چار پانچ دنوں سے ناندیڑ میں بڑی تعداد میں ممبئی پونہ ے اور حیدرآباد سے لوگ داخل ہوئے ہیں ان تمام کی طبی جانچ کی جارہی ہے۔

گزشتہ روز پانچ مشتبہ مریضوں کے سوائپ کے نمونے پونہ کی لیبارٹری کو روانہ کیے گئے تھے جس کی رپورٹ منفی آئی ہے۔جس کے بعد ضلع انتظامیہ نے سکون کی سانس لی یے۔ طبی عملہ بیرون شہر سے آنے والے تمام افراد پر باریک بینی سے نظر رکھے ہوئے ہے۔عمری میں حیدر آباد سے واپس آئے نوجوان کی کورونا رپورٹ بھی منفی آئی ہے ۔ لیکن پھر بھی اس نوجوان کو عمری کے آئسولیشن وارڈمیں نگرانی میں رکھا جائے گا۔

اسکے بعد پھر دوہفتوں تک گھرمیں کوروناٹائل رکھاجائے گا۔دریںا ثنا ءریاستی حکومت نے مہاراشٹرمیں کل شام پانچ بجے سے مہاراشٹرمیں کرفیو نافذ کردیا ہے البتہ اشیاءضروریہ کی دوکانوںکو کھلی رکھنے کی سہولت دی گئی ہے ۔ اسلئے آج ناندیڑشہر کے چوک بازار ‘اتوارہ اوردیگر گلی کوچوں میں کرانہ دوکان ‘دودھ ڈیری ‘ بیکری جیسی کھانے پینے کی اشیاءکی دوکانیں کھلی تھیں۔ کرفیو کے خوف سے لوگ آج گھروں سے بہت کم ہی باہر نکلے کیونکہ شہر میں ہر جگہ پولس کاسخت پہرہ ہے اور ٹووہیلر ‘فور وہیلرگاڑی سواروں کوروک کر آمدورفت کی وجوہات دریافت کی جارہی ہے ۔ناندیڑضلع انتظامیہ نے عوام الناس سے گھروں میں رہنے کی سختی کے ساتھ ہدایت دی ہے ۔