ناندیڑ:14 مارچ (ورق تازہ نیوز)دسویں جماعت کے سالانہ امتحانات امسال آف لائن طریقہ سے ہورہے ہیں۔ ناندیڑ ضلع میں 15مارچ سے 645امتحانی مراکز اور سب سینٹرز پر امتحانات کا آغاز ہورہا ہے۔ اس امتحان کے لیے 47 ہزار 476 طلباءنے اپنے ناموں کا اندراج کیا ہے۔ امتحانات کو نقل سے پاک اور پُرامن ماحول میں منعقد کرنے کے لیے ضلع کے علاوہ تعلقہ سطح پر مختلف خصوصی ٹیمیں تشکیل دی گئی ہیں۔ کورونا وباءکی وجہہ سے گزشتہ سال دسویں اور بارہویں کے امتحانات نہیں ہوئے تھے۔ بعد ازاں رواں تعلیمی سال میں اسکول و کالجز تاخیر سے کھولے گئے۔ کورونا کے امکانی خطرے کے پیش نظر تعلیمی نصاب مکمل ہوگا یا نہیں، امتحان آف لائن ہوگا یا آن لائن ، جیسے خدشات کی وجہہ سے طلباءمیں اُلجھن پیدا ہوگئی تھی۔

تاہم انتظامیہ نے تمام امتحانات امسال آف لائن طریقہ سے ہونے کے بارے میں وضاحت کی تھی۔ جس کے بعد 4 مارچ سے بارہویں جماعت کے امتحان کا آغاز ہوگیا۔ اسی طرح طلباءکے کریئر کی پہلی سیڑھی سمجھے جانے والے دسویں جماعت کے امتحان کا آغاز 15مارچ سے ہورہا ہے۔ اس ضمن میں ضلع انتظامیہ اور ضلع پریشد کے محکمہ تعلیم نے مکمل تیاریاں کرلی ہیں۔ ان تیاریوں کا جائزہ ضلع کلکٹر ڈاکٹر وپن اٹنکر، چیف ایگزیکٹیو آفیسر ورشا ٹھاکر کے علاوہ ایجوکیشن آفیسر پرشانت دگرسکر کی موجودگی میں لیا گیا۔ کورونا کے پیش نظر طلباءکی صحت کے لیے محکمہ تعلیم متعلقہ امتحانی مراکز پر مناسب منصوبہ بندی کرے، امتحانی مراکز پر آنے والے طلباءکی تھرمل گن کے ذریعے معائنہ کیا جائے

امتحانی مراکز پر مامور ذمہ داران اور طلباءکے علاوہ دیگر افراد کو امتحانی مراکز میں داخل نہ ہونے دیا جائے، حساس امتحانی مراکز پر پولیس کا بندوبست کیا جائے ، جیسی ہدایات امتحانی مراکز پر متعین تمام افسران و ملازمین کو دی گئی ہیں۔ دسویں جماعت کے امتحان کے لیے ناندیڑ ضلع میں 645 مراکز بنائے گئے ہیں۔جن میں 156 مین سینٹرز اور 489 سب سینٹرز شامل ہیں۔ واضح رہے کہ دسویں جماعت کے امتحان کے لیے 47 ہزار 476 طلباءنے اندراج کیا ہے۔ امتحان کے پُرامن اور نقل سے پاک انعقاد کے لیے مختلف ٹیمیں تشکیل دی گئی ہیں۔ جن میں شہر و ضلع سطح پر تحصیلدار، بی ڈی او کے ماتحت ٹیمیں شامل ہیں۔ اس طرح کی اطلاع ضلع پریشد کے محکمہ تعلیم کی جانب سے موصول ہوئی۔