نام تبدیلی سے ناراض ہنگولی میں کانگریس کے اعلیٰ قائدین و سرگرم کارکنان کا اجتماعی استعفیٰ

0 34

ہنگولی:30جون ( ورقِ تازہ نیوز) ہنگولی کے انڈین نیشنل کانگریس کے اعلیٰ قائدین و سرگرم کارکنان نے استعفیٰ کا ایک لیٹر کانگریس پارٹی کے ریاستی صدر نانا بھاﺅ پٹولے کو روانہ کیا ہے۔ جس میں کہا گیا ہے کہ ریاست میں مہاوکاس آگھاڑی حکومت کی جانب سے گزشتہ روز ریاستی وزراءکی ایک میٹنگ منعقد ہوئی، جس میں اورنگ آباد شہر کا نام تبدیل کرتے ہوئے سنبھاجی نگر اور عثمان آباد کا نام دھاراشیو رکھا گیا۔ جس پر کانگریس اور اس کی ہم خیال راشٹروادی کانگریس نے کسی بھی طرح کی مخالفت نہیں کی۔

ریاست میں مہاوکاس آگھاڑی حکومت کا قیام عمل میں آیا تھا۔ تاہم دیگرپارٹی کے ارکان اسمبلی کی بغاوت کی وجہہ سے یہ حکومت پانچ سال قائم نہیں رہ سکی۔ جس کا ہمیں افسوس ہے۔ مسلم اقلیتی سماج اس حکومت میں ریزرویشن ملنے کی اُمید میں تھا۔ تاہم مسلم سماج کو کوئی بھی ریزرویشن نہیں ملا۔ اس کے بجائے نام تبدیلی کی تجویز منظورکی گئی۔ جس پر کانگریس پارٹی نے کسی بھی طرح کی مخالفت نہ کرتے ہوئے حمایت دی۔ جس کی مذمت میں ہم تمام دستخط کنندگان پارٹی قائدین و سرگرم کارکنان اپنے عہدہ سے استعفیٰ دے رہے ہیں۔

کانگریس پارٹی کے ریاستی صدر نانا بھاﺅ پٹولے کو روانہ کیے گئے استعفیٰ کے لیٹر پر پارٹی کے ریاستی جنرل سیکریٹری عبدالحفیظ عبدالرحمن، ریاستی سیکریٹری محمد ذکی قریشی، ضلع کارگزار صدر شیخ فرید عرف منیر پٹیل، گروپ لیڈر و کارپوریٹر ہنگولی شیخ نہال بھیا، اقلیتی ضلع صدر سعد احمد عبدالقدوس، شہر صدر اونڈھا اجو انعامدار، ضلع صدر این ایس یو آئی ہنگولی شیخ زبیر ماموں، شہر صدر بسمت علیم الدین قادری، کارپوریٹر عبدالمعبود باغبان، شہر صدر اقلیتی سیل عابد علی جاگیردار، سابق کارپوریٹر خالد شاکر، سابق کارپوریٹر ندیم سوداگر، سابق کارپوریٹر منا مسرور، کارپوریٹر مجیب قریشی، سابق شہر صدر بسمت اصغر پٹیل عبدالباسط، شیخ ہارون شیخ جیلانی، سلیم خان پٹھان ، شیخ علیم الدین، اعجاز نائیک و دیگر کے دستخط ہیں۔